سبحان اللہ ، رمضان کی برکت سائنس بھی مان گئی ، انتہائی حیرت انگیر فائدہ

سبحان اللہ ، رمضان کی برکت سائنس بھی مان گئی ، انتہائی حیرت انگیر فائدہ
سبحان اللہ ، رمضان کی برکت سائنس بھی مان گئی ، انتہائی حیرت انگیر فائدہ

  

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) روزہ دنیا کا قدیم ترین رواج اور فریضہ رہا ہے جس کا تصور تقریباً ہر مذہب میں موجود ہے۔ اسلام سے لے کر بدھ مت اور ہندومت اپنے پیروکاروں کو باقاعدہ سے روزے رکھنے کی ترغیب دیتے تھے۔ بحالی صحت کے سلسلے میں روزہ یا فاقے کے اثرات اور فوائد کے حوالے سے طبی تحقیق کا سلسلہ بھی برسوں سے جاری ہے۔

ایک نئے مطالعے کے مطابق روزے یا فاقے پر مشتمل ڈائیٹ کے ذریعے کولیسٹرول کی سطح کو کم کیا جاسکتا ہے۔ محققین کو معلوم ہوا ہے کہ دو روز کسی قسم کی خوراک نہ لینے کے دورانیہ میں پری ذیا بیطس یا ذیا بیطس کے مرض سے قریب افراد میں کولیسٹرول کی سطح کم ہوئی۔ انٹرماﺅنٹین میڈیکل سینٹر یوٹاہ سے وابستہ تحقیق کاروں نے کہا ہے کہ روزوں کے فوائد پر کی جانے والی تحقیق کے نتیجے میں جسم کے اس حیاتیاتی عمل کی شناخت کی گئی ہے جو چربی کے خلیات میں سے خر اب کولیسٹرول کو جلا کو توانائی میں تحلیل کرتا ہے، اس طرح روزہ میں ڈائیٹ ذیا بیطس کے خطرے کے عامل کے خلاف لڑنے میں مدد کرسکتی ہے۔

محققین نے دیکھا کہ جب خوراک دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے 10 سے 12 گھنٹے کے روزے کے بعد جسم اپنی توانائی کی ضرورت پورا کرنے کے لئے جسمانی نظام کے اندر موجود توانائی کے دیگر ذرائع کی صفائی کا عمل شروع کردیتا ہے اور جسمانی چربی (چربی کے خلیات) موجود ایل ڈی ایل کولیسٹرول جسے خراب کولیسٹرول کہا جاتا ہے اسے جلا کر توانائی کے طور پر استعمال کرتا ہے۔ نگراں محققین ڈاکٹر بینجمن نے کہا کہ روزے میں ذیا بیطس کی روک تھام کی اہم صلاحیت موجود ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس