پاکستانی کاروباری نے دبئی کو بھی پاکستان سمجھ لیا ،انتہائی درد ناک انجام کو پہنچ گیا

پاکستانی کاروباری نے دبئی کو بھی پاکستان سمجھ لیا ،انتہائی درد ناک انجام کو ...
پاکستانی کاروباری نے دبئی کو بھی پاکستان سمجھ لیا ،انتہائی درد ناک انجام کو پہنچ گیا

  

دبئی (نیوز ڈیسک) دبئی میں ایک پاکستانی کاروباری کو ٹریفک پولیس کو 200 درہم رشوت دینے کی کوشش کے جرم میں تین ماہ قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق 34 سالہ پاکستانی کو ٹریفک پولیس اہلکار نے روکا کیونکہ گاڑی کی رجسٹریشن ایکسپائر ہوچکی تھی۔ ٹریفک اہلکار کے مطابق سسٹم نے اس بات کی تصدیق کی تو اس نے گاڑی بند کرنے کیلئے پولیس کو کال کردی کہ گاڑی کی رجسٹریشن آٹھ ماہ قبل ایکسپائر ہوچکی تھی۔ ایسے میں پاکستانی شہری نے اس کے ہاتھ میں 200 درہم رکھ دئیے۔ اہلکار نے پوچھا یہ کیوں، تو اس نے جواب دیا تاکہ تم میرا چالان نہ کرو۔ معصوم پاکستانی کاروباری کو یہ نادانی مہنگی پڑگئی اور عدالت نے اسے 3 ماہ قید کی سزا سنادی جو مکمل ہونے پر اسے ملک بدر کردیا جائے گا۔ فیصلے کے بعد پاکستانی شہری کے پاس اپیل کیلئے 15 دن کا وقت موجود ہے۔

ریاض (نیوز ڈیسک) سعودی پاسپورٹ ڈیپارٹمنٹ نے اعلان کیا ہے کہ 16 اگست سے کمپنیوں اور غیر ملکی ورکروں کو اس کے دفاتر وزٹ کرنے کی ضرورت نہ رہے گی کیونکہ تمام سہولیات آن لائن میسر ہوں گی اور غیر ملکی ورکرز کے آئی ڈی کارڈز سعودی پوسٹ کے ذریعے ڈلیور کئے جائیں گے۔

اسسٹنٹ ڈائریکٹر کرنل خالد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ 14 اکتوبر سے جاری کئے جانے والی کارڈز کی مدت 5 سال ہوگی۔ اس پر آدمی کا نام، نمبر، تاریخ پیدائش، پرمٹ نمبر، مذہب اور ادارے کا نام درج ہوگا۔ اس کارڈ کو سالانہ آن لائن اشیر یا مقیم سروسز کے ذریعے ری نیو کروایا جاسکتا ہے۔ اس کارڈ کو اقامہ نہیں بلکہ (Resident Identity Card) کہا جائے گا۔

 

مزید : ڈیلی بائیٹس