پی پی 97 ضمنی انتخابات ، مسلم لیگ ن کو ہرانے کے بعد اتحادی جماعتیں نشست کے لیے لڑ پڑیں ، تنازعہ کھڑا ہو گیا

پی پی 97 ضمنی انتخابات ، مسلم لیگ ن کو ہرانے کے بعد اتحادی جماعتیں نشست کے لیے ...
پی پی 97 ضمنی انتخابات ، مسلم لیگ ن کو ہرانے کے بعد اتحادی جماعتیں نشست کے لیے لڑ پڑیں ، تنازعہ کھڑا ہو گیا

  

گوجرانوالہ ( مانیٹرنگ ڈیسک ) پنجاب اسمبلی کے صوبائی حلقہ پی پی 97 میں مسلم لیگ ق اور تحریک انصاف کے مشترکہ امیدوار کی فتح کے بعد نشست کس پارٹی کے حصہ میں آئے گی اس بات کا تنازعہ کھڑا ہو گیا ہے ۔

مسلم لیگ ق اور تحریک انصاف کے مشترکہ امیدوار ناصر چیمہ نے ق لیگ کے انتخابی نشان سائیکل پر ضمنی انتخاب میں حصہ لیا جس کے بعد مسلم لیگ ق کے رہنماءچوہدری پرویز الٰہی کا کہنا تھا کہ پنجاب میں ان کی نشست میں اضافہ ہو گیا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ناصر چیمہ سائیکل کے انتخابی نشان پر الیکشن لڑے تھے اس طرح یہ نشست تحریک انصاف کی نہیں بلکہ مسلم لیگ ق کی ہے ۔ پرویز الٰہی کا کہنا تھا کہ الیکشن کے قوانین کے مطابق جب کوئی امیدوار ایک نشان پر الیکشن لڑتا ہے تو وہ نشست اسی پارٹی کی ہوتی ہے ۔

اس بیان کے جواب میں تحریک انصاف کی جانب سے موقف سامنے آیا ہے کہ پی پی 97 سے فاتح امیدوار ناصر چیمہ پاکستان تحریک انصاف میں شامل ہو چکے ہیں لیکن مجبوری کے باعث وہ سائیکل کے نشان پر الیکشن لڑے تھے ۔ اس تمام صورتحال میں فاتح امیدوار ناصر چیمہ کا کہنا تھا کہ ان کی یہ کامیابی پی ٹی آئی کی مرہون منت ہے اور وہ اپنی یہ نشست عمران خان کو بطور تحفہ پیش کریں گے ۔ مسلم لیگ ق کے رہنماءپرویز الٰہی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ وہ مہربان شخصیت ہیں اور امید ہے کہ وہ اس سیٹ کا دعویٰ نہیں کریں گے ۔

مزید : گوجرانوالہ /اہم خبریں