پہلی مرتبہ تین شیروں کو عمر قید کی سزا سنادی گئی، مگر کس جرم میں؟ جان کر آپ کو بھی بے حد حیرت ہوگی

پہلی مرتبہ تین شیروں کو عمر قید کی سزا سنادی گئی، مگر کس جرم میں؟ جان کر آپ کو ...
پہلی مرتبہ تین شیروں کو عمر قید کی سزا سنادی گئی، مگر کس جرم میں؟ جان کر آپ کو بھی بے حد حیرت ہوگی

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) بھارت میں جنگلی شیروں کے خلاف چلائے جانے والے انوکھے مقدمے کا فیصلہ آگیا ہے اور گرفتار کئے گئے 17 شیروں میں سے تین کو مجرم قرار دے کر عمر قید کی سزا سنادی گئی ہے ۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ان شیروں کو گزشتہ ماہ گرفتار کیا گیا تھا۔ یہ سب کے سب ریاست گجرات کے جیر نیشنل فوریسٹ میں رہنے والے ایشیائی شیر تھے، جنہیں گزشتہ تین ماہ کے دوران تین انسانوں کو ہلاک کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ جیر نیشنل فوریسٹ کے اردگرد واقع دیہاتوں میں شیروں کے پے درپے حملوں میں متعدد افراد زخمی بھی ہوئے تھے۔ اپریل اور مئی کے مہینوں میں جنگلی شیروں نے تین افراد کو کھالیا تھا۔ آخری واردات گزشتہ ماہ پیش آئی جب آموں کے باغات میں سوئے ہوئے ایک 14 سالہ لڑکے کو شیر اٹھاکرلے گئے۔ اس واقعے کے بعد دیہاتیوں نے شدید احتجاج کیا اور جنگلی شیروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔

فلموں میں دکھائے گئے مناظر حقیقت بن گئے، خوفناک مگر مچھ والدین کے سامنے 2 سالہ بچے کو ہڑپ کرگیا، ہر طرف چیخ و پکار

وائلڈ لائف حکام نے دیہاتیوں کے احتجاج کے بعد کارروائی کرتے ہوئے کل 17 شیروں کو دھرلیا۔ ان کے خلاف تقریباً ایک ماہ تک تحقیقات جاری رہیں جن کے دوران ان کے دانتوں، پنجوں اور فضلے کا تجزیہ کیا گیا جبکہ متعدد میڈیکل ٹیسٹ بھی کئے گئے۔ ان تحقیقات کے نتیجے میں بالآخر تفتیش کاروں نے ایک نر اور دو مادہ شیروں کو آدم خور قرار دے دیا۔ تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ نرشیر نے انسانوں کو ہلاک کیا جبکہ دو شیرنیاں اس کے ساتھ شامل تھیں اور انہوں نے بھی ہلاک کئے گئے انسانوں کا گوشت کھایا۔

مجرم قرار دئیے گئے تین شیروں کو عمر بھر کے لئے قید رکھا جائے گا۔ نر شیر کو جونا گڑھ چڑیاگھر میں قید کیا جائے گا جبکہ دونوں شیرنیوں کو ایک ریسکیو سینٹر میں عمر بھر کے لئے قید رکھا جائے گا۔ وائلڈ لائف حکام کا کہنا ہے کہ باقی 14 شیر بے گناہ ہیں اور انہیں عنقریب دوبارہ جنگل میں چھوڑدیا جائے گا۔

ریاست گجرات میں واقع جیر نیشنل فوریسٹ کے جنگلات دنیا میں ایشیائی شیروں کا واحد قدرتی مسکن ہیں۔ ان جنگلات میں ایک اندازے کے مطابق 523 ایشیائی شیر پائے جاتے ہیں۔ یہ دنیا بھر میں ایشیائی شیروں کی قدرتی ماحول میں پائی جانے والی سب سے بڑی تعداد ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس