بیٹے کے مقدمے کی پیروی کرنے پر معمرخاتون کو مبینہ طور پر جیل بھجوا دیاگیا

بیٹے کے مقدمے کی پیروی کرنے پر معمرخاتون کو مبینہ طور پر جیل بھجوا دیاگیا

لاہور(نامہ نگار)بیٹے کے مقدمے کی پیروی کرنے پر شادباغ پولیس نے بے زبان معمرخاتون کو مبینہ طور پر منشیات کیس میں جیل بھجوا دیا،خاتون نے سیشن عدالت میں اہلکاروں کے خلاف مقدمے کے لئے درخواست دائر کردی۔ ایڈیشنل سیشن جج حامد حسین کی عدالت میں گجر پورہ کی معمر خاتون شمع جبیں نے تھانہ شادباغ کے اہلکاروں کے خلاف اندراج مقدمے کی درخواست دی۔ خاتون نے عدالت میں پیش ہوکر سینہ کوبی کی اور دیواروں سے ٹکریں مارنے کی کوشش کی۔ معمر خاتون کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ اس کے بیٹے اظہر عباس کو شادباغ اور مصری شاہ پولیس نے انتقامی کارروائی کا نشانہ بناتے ہوئے منشیات کیس میں الجھا رکھا ہے۔ خاتون اپنے بیٹے کے مقدمات کی پیروی کر رہی ہے اور پولیس نے اسے راستے سے ہٹانے کے لئے ایک کلو چرس کے جھوٹے کیس میں ملوث کر کے جیل بھجوا دیا۔ عدالت سے استدعا کی کہ اسے انصاف دیا جائے اور اس کے خلاف جھوٹا مقدمہ بنانے والے اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے۔

خاتون کے وکیل نے بتایا کہ شمع جبیں بے زبان ہے ، پولیس نے اسے اس لئے جھوٹے کیس میں ملوث کیا ہے کہ وہ بیٹے کی پیروی کے لئے پولیس کے خلاف درخواستیں دیتی ہے۔ عدالت نے خاتون کے تحریری بیان اوروکیل کے دلائل سننے کے بعد کیس سی سی پی او امین وینس کو بجھوا دیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4