ثروت اعجاز قادری کے پنجاب میں داخلے پر پابندی کیخلاف درخواست پر اعتراض دور ، 22جون کو سماعت کیلئے لگانے کی ہدایت

ثروت اعجاز قادری کے پنجاب میں داخلے پر پابندی کیخلاف درخواست پر اعتراض دور ، ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے سنی تحریک کے سربراہ ثروت اعجاز قادری کے پنجاب میں داخلے پر پابندی کے خلاف درخواست پر عائد اعتراض دور کرتے ہوئے رجسٹرار آفس کو درخواست 22جون کو سماعت کے لئے لگانے کی ہدایت کردی۔مسٹر جسٹس محمود مقبول باجوہ نے سنی تحریک کے سربراہ ثروت اعجاز قادری کی درخواست پر بطور اعتراض کیس سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل عثمان نسیم نے موقف اختیار کیا کہ رجسٹرار آفس نے محکمہ داخلہ کا نوٹیفکیشن مدھم ہونے کا اعتراض عائد کیا ہے، انہوں نے عدالت کو مزید بتایا کہ محکمہ داخلہ پنجاب نے فروری میں سنی تحریک کے سربراہ ثروت اعجاز قادری کے صوبے میں داخلے پر پابندی عائد کی ہے جس کے لئے امن و امان کی صورتحال پیدا ہونے کا جواز بنایا گیا ہے، ثروت اعجاز قادری پر پابندی کے خلاف سیکرٹری محکمہ داخلہ پنجاب کوعرضداشت بھی دی گئی ہے جس پر کئی ماہ گزرنے کے باوجود کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے، انہوں نے استدعا کی کہ ثروت اعجاز قادری پر پابندی کالعدم اور عرضداشت پر فیصلے کا حکم دیاجائے، دلائل کے بعد عدالت نے سنی تحریک کے سربراہ ثروت اعجاز قادری کے پنجاب میں داخلے پر پابندی کے خلاف درخواست پر عائد اعتراض دور کرتے ہوئے رجسٹرار آفس کو درخواست 22جون کو سماعت کے لئے لگانے کی ہدایت کردی۔

مزید : صفحہ آخر