انڈونیشیا سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے 35ہلاک ،متعدد لاپتہ

انڈونیشیا سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے 35ہلاک ،متعدد لاپتہ

جکارتہ(آن لائن) انڈونیشیا کے جزیرے جاوا میں شدید بارشوں کے باعث آنے والے سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کے نتیجے میں 35 افراد ہلاک ہوگئے۔ امر یکی خبر رساں ادارے کے مطابق جزیرے جاوا میں شدید بارشوں کے بعد سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے 35 افراد ہلاک جبکہ متعدد لاپتہ ہوگئے۔انڈونیشین حکام کا کہنا ہے کہ جاوا میں درجنوں مکانات مٹی کے تودے تلے دب گئے جبکہ صوبے کے 16 اضلاع میں 2 روز سے ہونے والی بارشوں اور سیلاب سے ہزاروں مکانات کو شدید نقصان پہنچا ہے۔نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایجنسی کے ترجمان سوتوپو پرور نگوروہو کا کہنا ہے کہ ضلع پورجو میں سیلاب کی تباہ کاریوں کی وجہ سے 19 افراد ہلاک جبکہ 25 تاحال لاپتہ ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ضلع کیبومین میں 7، بنجرنگارا میں 6 جبکہ دیگر اضلاع میں کئی افراد ڈوب کر ہلاک ہوچکے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ لینڈ سلائیڈنگ میں مٹی کے تودے کے نیچے آکر تقریباً 31 افراد ہلاک ہوئے جبکہ 4 افراد کی موت ڈوبنے کی وجہ سے ہوئی ہے۔

ہلاک ہونے والوں میں دو 10 سالہ بچے سمیت حاملہ خاتون بھی شامل ہیں۔حکام نے بتایا کہ متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں شروع کر دی گئیں جن میں پولیس اور فوج کے علاوہ رضاکاروں کی بڑی تعداد بھی حصہ لے رہی ہے، اس کے علاوہ سیلابی ریلے میں لاپتا ہونے والے افراد کی تلاش کے لیے غوطہ خوروں کی خدمات بھی لی جا رہی ہیں۔جاوا کے جزیرے میں سیلاب کابہاؤ کم ہوگیا ہے لیکن بارش ہونے کی پیش گوئی کے بعد متاثرہ مکینوں کو چوکس رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔انڈونیشیا میں مون سون بارش کی وجہ سے اکثر سیلاب اور لیں ڈ سلائیڈنگ ہوتی رہتی ہیں۔انڈونیشیا میں 17 ہزار جرائر ہیں جہاں کروڑوں افراد پہاڑوں یا دریاؤں کے قریب ریائش پذیر ہیں۔

مزید : علاقائی