ترک فورسزنے ملکی حدودمیں داخل ہونے کی کوشش پر 11مہاجرین کو ہلاک کردیا

ترک فورسزنے ملکی حدودمیں داخل ہونے کی کوشش پر 11مہاجرین کو ہلاک کردیا

انقرہ (این این آئی)ترک سرحدی محافظوں نے ملکی حدود میں داخل ہونے کی کوشش کرنے والے گیار شامی مہاجرین کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا۔ہلاک ہونے والوں میں چار بچے بھی شامل ہیں۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق شامی آبزرویٹری نے ایک بیان میں بتایا کہ یہ شامی مہاجرین شام کے شمال مغربی علاقے سے سرحد عبور کر کے ترک ریاستی علاقے میں داخل ہو رہے تھے۔ برطانیہ میں قائم سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کے مطابق ان شامی ہلاک شدگان میں سے زیادہ تر کا تعلق ایک ہی خاندان سے تھا، جن میں چار بچے اور دو عورتیں بھی شامل تھے۔شام میں سرگرم انسانی حقوق کے کئی کارکنوں نے بھی ترک فوج کی فائرنگ سے ان ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے ،شامی تنازعے پر نظر رکھنے والی تنظیم سیریئن آبزرویٹری فار ہیومین رائٹس کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس سال کے آغاز سے اب تک خانہ جنگی کے شکار اس ملک سے ہجرت کر کے ترکی داخلے کی کوشش کرنے والے کْل ساٹھ کے قریب مہاجرین مختلف اوقات میں ترک سرحدی دستوں کی فائرنگ سے ہلاک ہو چکے ہیں۔ترکی شام میں اسد حکومت کے خاتمے کے لیے لڑنے والے جنگجوؤں کی مدد کرنے میں پیش پیش ہے تاہم اب اس نے شامی مہاجرین کے لیے اپنی ملکی سرحدیں بند کر دی ہیں۔

ترکی میں 27 لاکھ سے زائد شامی مہاجرین پناہ لیے ہوئے ہیں، جن میں سے صرف دو لاکھ 80 ہزار مہاجر کیمپوں میں مقیم ہیں۔

مزید : علاقائی