محبوبہ کے ہاتھوں تیزاب گردی کا شکار نوجوان دم توڑ گیا

محبوبہ کے ہاتھوں تیزاب گردی کا شکار نوجوان دم توڑ گیا
محبوبہ کے ہاتھوں تیزاب گردی کا شکار نوجوان دم توڑ گیا

  


ملتان (مانیٹرنگ ڈیسک)محبت کا جھانسہ دے کر شادی نہ کرنے والا نواجوان محبوبہ کے ہاتھوں تیزاب گردی کا شکار ہوکر دم توڑ گیا۔40سالہ شمیم کے مطابق 25سالہ صداقت اور ان کے درمیان رومانوی تعلقات قائم تھے ،لیکن صداقت نے بے وفائی کی جس سے دلبرداشتہ ہو کر اس پر تیزاب پھینکا جس پر وہ شدید جھلسنے کے بعدزخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے نشتر ہسپتال میں دم توڑ گیا۔

تفصیلات کے مطابق شادی سے انکار پرملتان کی شمیم نامی 40سالہ خاتون نے 25سالہ نوجوان پر تیزاب پھینک دیا جسے تشویشناک حالت میںنشتر ہسپتال کے برنٹ یونٹ میں منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔قبل ازیں پولیس نے عاشق پر تیزاب ڈالنے والی محبوبہ کوگرفتار کرلیا ہے ۔

تھانہ مخدوم رشید پولیس کی حراست میں موضع سنگھیڑا چاہ گھڑیالہ والہ کی رہائشی شادی شدہ خاتون محبوبہ 40 سالہ شمیم مائی نے میڈیا کو بتایا کہ وہ شادی شدہ خاتون ہے اور اس کے چار کمسن بچے ہیں ،25 سالہ صداقت کا گھر آنا جانا تھا اور مجھے اپنے ساتھ شادی کرنے کا جھانسہ دے کر زیادتی بھی کرتا رہا لیکن پھر کسی اور سے شادی رچا لی جس کی وجہ سے اس پر تیزاب پھینکا۔

ایک نیوز ایجنسی کے مطابق صداقت کے شمیم کے ساتھ گزشتہ تین برس سے مبینہ طور پر ناجائز تعلقات تھے ۔ زیادتی کے دوران گھر والوںکو پتہ چلنے پر خاتون نے نوجوان صداقت پر تیزاب پھینکا۔ تھانہ مخدوم رشید پولیس نے مقدمہ درج کر کے کاروائی شروع کر دی ہے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

بی بی سی/ اے ایف پی کے مطابق دونوں کے درمیان کسی بات پر جھگڑا ہوا تو 25 سالہ صداقت نے شمیم سے دوسری شادی کرنے سے انکار کر دیا جس پراس نے منگل اور بدھ کی درمیانی شب بہانے سے صداقت کو اپنے گھر بلایا اور اس کے جسم پر تیزاب پھینک دیا۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمہ نے صداقت کے بھائی رفاقت کو ٹیلی فون کر کے بتایا اس نے صداقت کو گھر بھیج دیا ہے لہٰذا اس کا خیال رکھو۔ پولیس نے ملزمہ کے خلاف انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر کے گرفتار کر لیا ہے۔

مزید : ملتان /اہم خبریں