پاکستان تنہائی کا شکار نہیں ،مسلم ممالک کیساتھ بہترین تعلقات ہیں:سرتاج عزیز

پاکستان تنہائی کا شکار نہیں ،مسلم ممالک کیساتھ بہترین تعلقات ہیں:سرتاج عزیز
پاکستان تنہائی کا شکار نہیں ،مسلم ممالک کیساتھ بہترین تعلقات ہیں:سرتاج عزیز

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر اعظم کے مشیر برائے خارجہ امور سرتاج عزیز کا کہنا ہے کہ یہ تاثر درست نہیں کہ پاکستان تنہائی کا شکار ہے،نائن الیون کے بعد مسلمان ممالک پر یلغار ہوئی لیکن پاکستان مستحکم رہا۔ہماری خارجہ پالیسی کا مقصد اقتصادی ترقی ہے۔

قومی اسمبلی میں اظہا ر خیال کرتے ہوئے مشیر خارجہ سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ نائن الیون کے بعد عالمی سطح پر تبدیلیاں رونما ہوئیں ۔مسلم ممالک پر یلغار ہوئی افغانستان،عراق ،شام اور لیبیا پر سخت حملے ہوئے لیکن ان کے مقابلے میں پاکستان کہیں زیادہ مستحکم ہے۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

انہوں نے کہا کہ یہ تاثر درست نہیں کہ خارجہ سطح پر ہم تنہائی کا شکار ہیںیا ستر سال سے ہماری خارجہ پالیسی ناکام رہی ہے۔انہوں نے کہاتین سال میں کمیونٹی سروسز میں تاریخی کام ہوا،ایران سے تعلقات بہتر سمت میں ہیں۔بھارتی وزیر اعظم کے دو مسلمان ممالک کے دوروں پر کہا گیا کہ ہمارے ان مسلم ممالک سے تعلقات اچھے نہیں ۔بھارت سے کشیدگی کو بڑھنے نہیں دیا۔افغانستان میں کوئی فیورٹ نہیں،پاکستان عدم مداخلت کے اصول پر کاربند ہے۔امن کیلئے کوشش کررہے ہیں،بارڈر منیجمنٹ کیلئے کام چل رہا ہے سرحدی نظام کے بغیردہشتگردی کی جنگ جیتنا ممکن نہیں۔

مسلم ممالک کے ساتھ پاکستان کے بہترین تمدنی، مذہبی روائتی و ثقافتی تعلقات ہیں۔دوسرے ممالک کی جنگوں میں کودنے کی روایت کو ختم کیا۔ہماری پالیسی ہے کہ دوسروں کی لڑائی نہیں لڑنی۔عالمی امور میں ہمیشہ ملکی مفادات کو ترجیح دی۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

انہوں نے کہا کہ امریکہ میں بھارتی لابیز کی تعریف جبکہ ہم پر تنقید کی جا رہی ہے تو اس پر یہ کہوں گا وہاں بیٹھا سابق سفیر کھل کر ملک کے خلاف بیانات دے رہا ہے جس سے پاکستان کی مشکلات میں اضافہ ہو رہا ہے۔

انہوں نے کہا ہم خود ہی تنقید کریں گئے تو دیگر ممالک سے کیا توقعات رکھ سکتے ہیں۔سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ مشیر خارجہ کا عہدہ آئین کے عین مطابق ہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں