ایران اور افغانستان کے درمیان تہران میں باہمی مذاکرات

ایران اور افغانستان کے درمیان تہران میں باہمی مذاکرات

تہران (اے پی پی) ایران اور افغانستان کے درمیان تہران میں مختلف پانچ کمیٹیوں کے دائرے میں پہلے دور کے مذاکرات ہوئے۔ایرانی میڈیا کے مطابق ان مذاکرات میں ایران کے نائب وزیر خارجہ ابراہیم رحیم پور نے دونوں ملکوں کے تعلقات کو خوشگوار قرار دیتے ہوئے امید ظاہر کی کہ دونوں ملکوں کے درمیان مذاکرات میں پائیدار مفادات کی ضمانت کی غرض سے دو طرفہ کامیابی کا طریقہ تلاش کر لیا جائے گا۔اس موقع پرافغان قومی سلامتی کونسل کے نائب سربراہ یما کرزئی نے اس حوالے سے کہا کہ ایران اور افغانستان دہشتگردی، منشیات کی اسمگلنگ، منظم جرائم اور شرپسند گروپوں جیسے مشترکہ خطرات سے نمٹنے کے لئے اسٹریٹیجک تعاون کو مزید فروغ دیں گے۔تہران میں منعقدہ مذاکرات کا مقصد ایران اور افغانستان کے درمیان اقتصادی، سکیورٹی، مہاجرین، پانی اور ثقافتی امور کے شعبوں میں تعاون کو وسعت دینے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کرنا ہے۔واضح رہے کہ ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے گزشتہ مہینے افغانستان کے دورے کے موقع پر افغان صدرمحمد اشرف غنی کے ساتھ ایک ملاقات میں ان پانچ کمیٹیوں کی تشکیل پر اتفاق کیا تھا۔

مزید : عالمی منظر