جب ٹنڈولکر کے پاس کرایہ نہ تھا

جب ٹنڈولکر کے پاس کرایہ نہ تھا
 جب ٹنڈولکر کے پاس کرایہ نہ تھا

  

ممبئی (نیٹ نیوز)بھارتی کرکٹ ٹیم کے عظیم کھلاڑی سچن ٹنڈولکر کا شمار دنیا کے امیرترین کھلاڑیوں میں ہوتا ہے تاہم حال ہی میں انھوں نے انکشاف کیا ہے کہ انڈر15 ٹیم کے لیے کھیلتے ہوئے ایک دفعہ ان کے پاس گھر واپسی کی خاطر ٹیکسی کا کرایہ ادا کرنے کے پیسے نہیں تھےَٹنڈولکر نے ایک تقریب میں صحافیوں سے گفتگو میں کہا کہ میں 12 سال کی عمر میں ممبئی انڈر19 ٹیم کے لیے منتخب ہوا تھا۔ مجھے اتنی خوشی ہوئی کہ تھوڑے سے پیسے لے کر پونہ چلاگیا جہاں تین میچ کھیلنے تھے تاہم وہاں بارش ہوگئی۔ انھوں نے بتایاکہ میں اپنی باری میں 4 رنز بنا کر رن آؤٹ ہوا تو افسردگی کے عالم میں چیختے ہوئے ڈریسنگ روم کی طرف آیا۔ اس کے بعد مجھے بیٹنگ کے لیے دوسرا موقع نہیں ملا۔سچن کاکہنا تھا کہ بارش کے باعث پورا دن کھیل نہیں ہوسکا اور ہم فلم دیکھنے اور کھانے کے لیے باہر گئے جہاں میں نے اپنے سارے پیسے ختم کردیے۔ لہذا ممبئی واپسی کے دوران میرے جیب میں ایک پائی نہیں تھی۔ عظیم کرکٹر نے مزید کہا کہ میں ممبئی اسٹیشن پر اتر کر شیواجی پارک تک پیدل گیا کیونکہ میرے پاس بس کا بھی کرایہ نہ تھا۔ٹنڈولکر نے اس موقع پر ہنستے ہوئے کہا کہ آپ تصّور کر سکتے ہیں کہ اگر میرے پاس اس وقت موبائل فون ہوتا تو میں اپنے والدین کو ایک ایس ایم ایس کرتا اور وہ مجھے پیسے بھیج دیتے۔ یوں میں ٹیکسی کے ذریعے اپنے گھر پہنچ جاتا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی