صاف پانی پروگرام کیلئے بھرپور آگاہی مہم چلانے کا فیصلہ

صاف پانی پروگرام کیلئے بھرپور آگاہی مہم چلانے کا فیصلہ

لاہور (جنرل رپورٹر)صوبائی وزیر بلدیات محمد منشاء اللہ بٹ نے محکمانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پینے کا صاف پانی ہر شہری کا بنیادی حق ہے اور حکومت پنجاب پینے کے صاف پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے میگاپراجیکٹ کا آغاز کر چکی ہے ۔نئے مالی سال کے بجٹ میں صاف پانی پروگرام کیلئے 25 ارب روپے کی خطیر رقم مختص کی گئی ہے۔انہو ں نے کہا کہ اس پروگرام کے ذریعے شہریوں کو صاف پانی مہیا کرکے ان کا بنیادی حق دیا جائے گااور یہ منصوبہ انسانی صحت کے حوالے سے ایک انقلاب آفرین منصوبہ ثابت ہوگا۔ ابتدائی طو رپر پینے کے صاف پانی کے پروگرام کا آغاز جنوبی پنجاب سے کیا جا رہا ہے جبکہ بہاولپور ریجن میں 116 واٹر فلٹریشن پلانٹس شہریوں کو پینے کا صاف پانی فراہم کر رہے ہیں اور اب پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے پروگرام کو جنوبی پنجاب کی تحصیلوں سے شروع کیا جا رہاہے اور اس پروگرام کو انتہائی تیزی سے مکمل کیا جائے گا۔ پنجاب حکومت نے اس پروگرام پر عملدرآمد کیلئے 2 کمپنیاں تشکیل دی ہیں اوریہ کمپنیاں خود فیصلے کریں ، ان پر عمل کریں اور نتائج دیں۔ انہو ں نے کہا کہ بعض افسروں کی مجرمانہ غفلت اور پیشہ ورانہ بددیانتی کے باعث مفاد عامہ کے اس عظیم منصوبے میں تاخیر ہوئی لیکن پنجاب حکومت کے بروقت اقدام کے باعث نہ صرف اس پیشہ ورانہ بددیانتی کو پکڑا گیا بلکہ متعلقہ افسران کے خلاف کارروائی بھی کی جا رہی ہے۔انہو ں نے کہا کہ اب ایک ٹیم کے طور پر کام کرتے ہوئے درست سمت کی جانب بڑھ رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے پروگرام کے بارے میں موثر آگاہی مہم چلائی جائے۔ اس پروگرام کی کامیابی کیلئے کمیونٹی کی شرکت بھی بہت ضروری ہے۔ غیر فعال دیہی واٹر سپلائی سکیموں کو جلد فعال کیا جائے اور ان سکیموں کی مانیٹرنگ کا موثر نظام بھی وضع کیا جائے کیونکہ ان سکیموں کے فعال ہونے سے لاکھوں افراد کو فائدہ پہنچے گا۔ انہوں نے کہا کہ پانی کے نمونوں کی چیکنگ کیلئے ملتان، ڈیرہ غازی خان، لاہور اور راولپنڈی میں قائم 4 واٹر ٹیسٹنگ لیبز کی اپ گریڈیشن کا کام جلد مکمل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے موبائل واٹر ٹیسٹنگ لیبز بھی حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اورابتدائی طور پر 5 موبائل واٹر ٹیسٹنگ لیبز کے ذریعے پانی کے نمونے چیک کئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ٹیوب ویلوں میں کلورینیشن کے عمل کے ذمہ دار متعلقہ اضلاع کے ڈپٹی کمشنر ہوں گے۔ پائپ لائنوں کی حالت کا جائزہ لینے کیلئے سروے کرایا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صاف پانی ایک نعمت ہے۔ آئیے مل کر صوبے کے عوام کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلئے دن رات ایک کر دیں۔ ہمیں اپنی توانائیاں یکجا کرکے اس پروگرام کو تیزی سے آگے بڑھانا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1