ختم نبوت کے تحفظ سے ہی امت مسلمہ کی بقاء مضمر ہے،علماء کرام

ختم نبوت کے تحفظ سے ہی امت مسلمہ کی بقاء مضمر ہے،علماء کرام

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) ختم نبوت کے تحفظ سے ہی امت مسلمہ کی بقا مضمرہے منکرین ختم نبوت جہاں بھی جائیں گے انکا آئینی اور قانونی تعاقب جاری رکھیں گے ۔ ۔عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت کی حفاظت کے لیے امت مسلمہ ہمیشہ حساس رہی ہے عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے لیے بارہ سو صحابہ کرام نے جام شہادت نوش کیا ہے ان خیالات کا اظہار عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی رہنما مولانا عزیزالرحمن ثانی ،مولانا قاری علیم الدین شاکر،پیررضوان نفیس،مولانا عبدالشکور حقانی ، مولانا عبدالنعیم و دیگر نے کیا۔

،مولانا محبوب الحسن طاہر،مولانا عمر حیات ، مولانا عبدالعزیز،حافظ ظفراللہ سندھی اور دیگرعلماء کرام نے جامع مسجد مولانا احمد علی لاہوری مسجد اچھرہ لاہور میں افطار ڈنر اور اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔علماء کرام نے کہا کہ آئین کی دفعہ295-C تحفظ ناموس رسالت ایکٹ کیخلاف کوئی بات برداشت نہیں کریں گیقادیانی اپنے کفر و ارتداد اور اپنے الحاد آفریں نظریات کو اسلام باور کرواکے عالمی دنیا کو دھوکہ دے رہے ہیں۔ اسلام و ملک دشمن قوتوں،منکرین ختم نبوت اور انکے آلہ کاروں کو متنبہ کرتے ہیں کہ وہ آئین کی اسلامی دفعات اور تحفظ ناموس رسالت کے ایکٹ کیخلاف اپنی مہم جوئی بند کریں۔ ۔علماء نے کہا کہ ناموس رسالت قانون کیخلاف یہودی و قادیانی لابی سازشوں میں مصروف عمل ہے۔اسلامیان پاکستان ناموس رسالت ایکٹ کیخلاف کوئی بھی سازش ہر گز برداشت نہیں کرینگے۔غیور مسلمان اپنا سب کچھ قربان کردیں گے لیکن ناموس رسالت پر ہرگزآنچ نہیں آنے دیں گے۔عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت کی حفاظت کے لیے امت مسلمہ ہمیشہ حساس رہی ہے عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے لیے بارہ سو صحابہ کرام نے جام شہادت نوش کیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1