جامع مسجد محمدی محمود کوٹ 40 سالہ قدیمی ‘ اتحاد بین المسلمین کا مرکز

جامع مسجد محمدی محمود کوٹ 40 سالہ قدیمی ‘ اتحاد بین المسلمین کا مرکز

ملتان (سٹی رپورٹر)جامع مسجدمحمدی محمود کوٹ 40سال قدیمی مسجد 1963میں بنیاد رکھی گئی حکیم عبد المجید نے ذاتی زرعی زمین فروخت کرکے دو کینال اراضی خرید کر جامع مسجد محمدی اور مدرسہ کے لئے وقف کی اس کے بعد 1965میں مسجد کی باقاعدہ تعمیر کا آغاز کیا ایک بڑا ہال بر آمدہ اور وسیع صحن پر مشتمل مسجد فن تعمیر کا شاہکارہے مسجد کے اوپر 70فٹ بلند مینار موجود ہے جس پر دس لاکھ رو پے سے (بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

زائد کی لاگت آئی مسجد میں ایک ہزار وپے زائد نمازیوں کی گنجائش ہے عید کے موقع پر بڑا اجتماع منعقد ہوتا ہے جس میں دور دراز سے لوگ نماز عید ین ادا کرنے کے لئے آتے ہیں مسجد کے متصل جامعہ محمودیہ کے نام سے مدرسہ بھی قائم ہے جس میں 200سے زائد بچے زیر تعلیم ہیں جامع مسجد محمدی محمود کوٹ موجودہ حالات میں بھی 24گھنٹے کھلی رہتی ہے جس میں ہر مسلک کا فرد نماز ادا کر تا ہے رات کے اوقات میں مسافروں کے ٹھہرنے کا بھی انتظا م کیا جاتا ہے مسجد کی تعمیر پر تاحال50لاکھ روپے کی لاگت آچکی ہے جبکہ تعمیر و تزئین و آرائش کا سلسلہ سال بھر جاری رہتا ہے جامع مسجد محمدی محمود کوٹ گنجان آبادی اور مین روڑ پر ہونے کے باعث نمازیو ں کی توجہ کا مرکز ہے ہر نماز میں نمازی بڑی تعداد میں مسجد میں آتے ہیں بتایا جاتا ہے وقت فوقتاً مسجد کی مرمت اور ترئین و آرائش ہو تی رہتی ہے مسجد کی تعمیر میں اہل محلہ کابھر پور تعاون رہاہے جامع مسجد محمدی اتحاد بین المسلمین کے لئے اہمیت کی حامل مسجد ہے ماہ رمضان المبارک م ، محرم الحرام کے موقع پر اجتماعات منعقد کئے جاتے ہیں جس میں سماجی سیاسی مذہبی رہنما کثیر تعداد میں شرکت کرکے امن کے پیغام کو عام کرنے میں اپنا بھر پور کردار ادا کرتے ہیں؂جامع مسجد محمدی محمود کوٹ ناظم حکیم عبد اللہ، امام مسجد قاری محمد اسماعیل ، جبکہ خطیب حکیم عبد اللہ ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر