سرکاری اراضی کی غیرقانونی الاٹمنٹ ،سماعت 11جولائی تک ملتوی

سرکاری اراضی کی غیرقانونی الاٹمنٹ ،سماعت 11جولائی تک ملتوی

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ نے سرکاری اراضی کی غیر قانونی الاٹمنٹ کے حوالے سے دائر درخواست کی سماعت 11جولائی تک ملتوی کردی ہے ۔منگل کو سندھ ہائی کورٹ میں حکومت سندھ کی 77 ایکڑ اراضی غیر قانونی الاٹ کر نے کے معاملے کی سماعت ہوئی ۔ڈپٹی کمشنر بدین شوکت جوکھیو ، علی شیر میرانی ، اللہ بچایو چانڈیو، اکبر ہنگورو اور روینیو کے دیگر افسران عدالت میں پیش ہوئے ۔عدالت نے ڈپٹی کمشنر بدین شوکت جوکھیو کے وکیل کی عدم پیشی پر اظہار برہمی کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ آپ کی ضمانت واپس لیتے ہیں ، وکیل پہنچ جائے گا۔دوران سماعت ملزمان نے موقف اختیار کیا کہ اس زمین سے ہمارا کوئی تعلق نہیں ہے ۔چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ نے ریمارکس دیئے کہ تو کیا آپ سب کو نماز پڑھتے ہوئے پکڑا گیا ہے ۔ملزمان کے وکلا کی جانب سے تیاری کے لئے مہلت طلب کرنے پر عدالت نے کیس کی مزید سماعت 11جولائی تک ملتوی کردی ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر