سرکاری اراضی پر قبضہ ‘ تعمیرات کیساتھ سرکاری ملازمین پر حملہ کیس میں ملوث 3 ملزمان کو مجموعی طور پر 10 سال قید و جرمانہ کی سزا

سرکاری اراضی پر قبضہ ‘ تعمیرات کیساتھ سرکاری ملازمین پر حملہ کیس میں ملوث 3 ...

ملتان (خبر نگار خصوصی) جج انسداددہشت گردی کی خصوصی عدالت ملتان نے سرکاری اراضی پر قبضے اورتعمیرات کے ساتھ سرکاری ملازمین پر حملے کے مقدمہ میں ملوث 3 ملزموں کو فی کس(بقیہ نمبر24صفحہ12پر )

مجموعی طورپر 10 سال 3 ماہ قید اورایک لاکھ 51 ہزار500 روپے جرمانے کی سزاکا حکم دیاہے۔فاضل عدالت میں تھانہ سیتل ماڑی کے مطابق اسسٹنٹ کمشنر صدراورسیکرٹری ڈسٹرکٹ ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی ملتان محمدکاشف ڈوگرنے 9 دسمبر 2015 ء کو مقدمہ درج کرایاکہ ملزموں نے مسلح ہوکرصبح سویرے جنرل بس اسٹینڈ پرواقع ضلعی حکومت کی سرکاری زمین پر قبضہ کرلیا اورمزدورں کے زریعے غیرقانونی طورپرتعمیرات بھی شروع کردیں اورمدعی افسرکے ٹیم کے ہمراہ اطلاع پر آنے کے بعداسلحہ تان لیااورجان سے مارنے کی دھمکیاں دینے کے ساتھ سرکاری سامان بھی چوری کرکے لے گئے ہیں۔فاضل عدالت نے جرم ثابت ہونے پرملزموں محمدبلال،محمدرضوان اورمحمدارشادکومختلف دفعات کے تحت ہرملزم کو 10 سال 3 ماہ قید اورایک لاکھ 51 ہزار500 روپے جرمانے سزاکا حکم دیاہے۔ نیز ملزموں محمدنعمان اوراشفاق کو بری کرنے کا حکم دیاہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر