پاکستان نے عالمی فورمز پر مسئلہ کشمیر اٹھا کر مذاکرات پر سوالیہ نشان لگا دیا ہے :بھارت

پاکستان نے عالمی فورمز پر مسئلہ کشمیر اٹھا کر مذاکرات پر سوالیہ نشان لگا دیا ...

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)بھارتی وزیر خارجہ سشماسوراج نے کہا ہے پاکستان نے عالمی فورموں میں مسئلہ کشمیر اٹھاکر دو طر فہ مذاکرات پر سوالیہ نشان لگا دیا ہے حالانکہ دونوں ممالک باہمی طور پر بھی مسائل حل کرنے کیلئے تیار ہیں، بھارتی میڈیا کے مطابق صحافیوں سے بات چیت میں انکا مزید کہنا تھا پاکستان کشمیر کے حوالے سے گمراہ کن پروپیگنڈا کررہا ہے جبکہ کشمیر عالمی مسئلہ نہیں بلکہ بھارت کا اندورنی مسئلہ ہے جس میں کسی طور پر تیسرے فریق کی ثالثی قابل قبول نہیں ہوسکتی ، پاکستان عالمی فورموں پر مسئلہ کشمیر کو اٹھا کر اس بات کا مظاہرہ کررہا ہے کہ کشمیر سلگتا ہوا مسئلہ ہے حالانکہ ایسا کچھ نہیں کیونکہ کشمیری عوام نے پہلے سے ہی انتخابات میں حصہ لیکر بھارت کیساتھ رہنے کو ترجیح دی ہے ، جب جب بھی کشمیر میں تشدید بڑھتا ہے تو اس سلسلے میں سرحد پار کی دراندازی بنیادی وجہ ہوتی ہے اور پاکستان کی طرف سے ہی کشیدگی کی ہوا چلتی ہے، بھارت اور پاکستان کے درمیان پہلے ہی معائدے موجود ہیں جن کی بنیاد پر دونوں ممالک مسئلہ کشمیر سمیت تمام مسائل کو حل کرسکتے ہیں لیکن اسکے باوجود بھی شملہ معائدے اور اعلان لاہور کو دیکھتے ہوئے پاکستان جان بوجھ کر معاملے کو خراب کررہا ہے، عالمی برادری کا دھیان بھی کشمیر کی جانب نہیں اور بھارت نے پہلے ہی یہ بات واضح کردی ہے کہ صورتحال کو بہتر بنانے کیلئے تشدد کا خا تمہ لازمی ہے، بھارت مذاکرات کیلئے ہمیشہ ہی تیار رہا ہے اور اس سلسلے میں کسی کو گمان نہیں رہنا چاہیے کہ بی جے پی حکومت ملک کی سلامتی پر کوئی سمجھوتا نہیں کریگی ، پر امن مذاکرات کیلئے لائن آف کنٹرول پر خاموشی لازمی ہے۔

بھارت

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر