راحیل شریف اتحادی فورس کی سربراہی کیلئے ذاتی حیثیت میں گئے، سرکاری طورپر نہیں بھجوایا گیا : سرتاج عزیز

راحیل شریف اتحادی فورس کی سربراہی کیلئے ذاتی حیثیت میں گئے، سرکاری طورپر ...
راحیل شریف اتحادی فورس کی سربراہی کیلئے ذاتی حیثیت میں گئے، سرکاری طورپر نہیں بھجوایا گیا : سرتاج عزیز

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ جنرل (ر) راحیل شریف کو سرکاری طور پر نہیں بھیجوایاگیا بلکہ وہ اسلامی اتحاد فورس کی سربراہی کیلئے ذاتی حیثیت میں گئے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق مشرق وسطی بالخصوص سعودی عرب قطرتنازع پربریفنگ دیتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ پاکستان خلیجی ممالک کے تنازع میں غیر جابندار کی پالیسی پر کاربند ہے ۔”پاکستان قطرسعودی تنازع میں غیرجانبدار پالیسی پر قائم ہے“۔

مشیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان کسی دوسرے کے مسئلے میں ٹانگ نہیں اڑائیگا۔یمن سعودی تنازع پرپارلیمانی قرارداد پاکستان کی پالیسی کابنیادی نکتہ ہے۔

سینیٹر کریم خواجہ نے کہا کہ راحیل شریف کو رضاکارانہ طور پر واپس آجا نا چاہیے، سعودی عرب ایسے بھرتیاں کرے گا تو ایران بھی کریگا ۔خلیجی بحران میں پاکستان کے کردار سے مطمئن نہیں ۔

تحریک انصاف کے سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ راحیل شریف کی اس طرح واپسی سے پاک سعودیہ تعلقات خراب ہونگے ۔ ہمارے ملک میں پچاس فیصد زر مبادلہ خلیجی ممالک سے آتا ہے ۔

مزید : قومی /اہم خبریں