کینسر کا نام سنتے ہی اس عورت کے سب دوستوں نے اُس کی مدد کیلئے پیسے دے دئیے، لیکن جب حقیقت منظر عام پر آئی تو نہ صرف پیسے واپس کرنا پڑے بلکہ پولیس نے گرفتار بھی کرلیا

کینسر کا نام سنتے ہی اس عورت کے سب دوستوں نے اُس کی مدد کیلئے پیسے دے دئیے، ...
کینسر کا نام سنتے ہی اس عورت کے سب دوستوں نے اُس کی مدد کیلئے پیسے دے دئیے، لیکن جب حقیقت منظر عام پر آئی تو نہ صرف پیسے واپس کرنا پڑے بلکہ پولیس نے گرفتار بھی کرلیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)نوسربازوں کو لوگوں کے مال سے غرض ہوتی ہے۔ کوئی دوست ہے یا رشتہ دار، انہیں اس سے کیا مطلب۔ ایسے ہی امریکہ میں ایک لڑکی نے اپنے ہی دوستوں سے لاکھوں روپے ہتھیا لیے اور اس کے لیے ایسا طریقہ استعمال کیا کہ علم ہونے پر اس کے دوست بھی ششدر رہ گئے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق امریکی ریاست مین (Maine)کے شہر بریجٹن کی 25سالہ ہیلیری مک لیلن نامی یہ لڑکی ایک بار پر کام کرتی تھی۔ 2016ءمیں اس نے اپنے باس، ساتھی ملازمین اور دوستوں سے کو بتایا کہ”میں چھاتی کے کینسر میں مبتلا ہو چکی ہوں جو تیزی سے پھیل رہا ہے اور میرے پاس علاج کے پیسے نہیں ہیں۔“

بھارتیوں نے میری بہن کا ریپ کردیا اور میں۔۔۔ وہ شخص جو اپنی بہن کے غم میں 10 سال تڑپتا رہا، بالآخر۔۔۔

ہیلیری کے دوستوں نے اپنے پاس جمع شدہ رقم بھی اکٹھی کی اور پھر اس کے لیے اوروں سے بھی چندہ جمع کرنا شروع کر دیا۔ انہوں نے 17ہزار ڈالر(تقریباً17لاکھ روپے) جمع کرکے ہیلیری کو دیئے۔ کچھ عرصے بعد ہیلیری نے دوستوں کو بتایا کہ اس نے کیموتھراپی کرا لی ہے لیکن دوستوں نے دیکھا کہ اس کے سر کے بال جوں کے توں تھے، بالکل نہیں جھڑے تھے۔ دوستوں نے بہانے سے اس سے اعتراف کروایاجس میں اس نے قبول کیا کہ اسے کینسر کا مرض کبھی نہیں ہوا۔ دوستوں نے اس کے اس اعتراف کی ریکارڈنگ کر لی اور اس کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا۔ اب پولیس نے ہیلیری کو گرفتار کر لیا ہے اور اس کے خلاف مقدمے کی سماعت جاری ہے۔ رپورٹ کے مطابق اگر جرم ثابت ہو گیا تو اسے 10سال قید یا جرمانے کی سزا ہو سکتی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس