الیکشن کمیشن کا ’’نشئی ‘‘امیدواروں کو انتخابی عمل سے روکنے سے انکار

الیکشن کمیشن کا ’’نشئی ‘‘امیدواروں کو انتخابی عمل سے روکنے سے انکار

کراچی(این این آئی) الیکشن کمیشن نے عام انتخابات میں شراب اور منشیات استعمال کرنیوالے امیدواروں کو انتخابی عمل سے روکنے سے انکار کر دیا ہے ۔ کراچی کے ایک شہری نثار احمد شیخ نے ایک مکتوب کے ذریعے چیف الیکشن کمشنر جسٹس سردار محمد رضا سے درخواست کی تھی الکوحل اور منشیات کے استعمال کا پتا لگانے کیلئے تمام امیدواران کیلئے خون اور پیشاب کے لیبارٹری ٹیسٹ لازمی قرار دئیے جائیں ۔ جن امیدواران کے یہ ٹیسٹ مثبت آئیں انہیں عام انتخابات کیلئے نااہل قرار دیا جائے ۔ نثار احمد شیخ نے اپنے مکتوب میں واضح کیا تھا کہ یہ ایک تلخ حقیقت ہے کہ ارکان پارلیمنٹ کی اکثریت شراب اور دیگر منشیات کو استعمال کرتی ہے۔ اس مکتوب کا الیکشن کمیشن نے تقریبا ایک ماہ کے بعد معذرت کی صورت میں جواب دیا ہے ۔ ڈپٹی ڈائریکٹر(الیکشن ) عاطف رحیم نے الیکشن کمیشن کی جانب سے بھیجے گئے جواب میں کہا ہے کہ منشیات اور الکحل کے لیے کسی ٹیسٹ کے لیے کوئی قانون موجود نہیں ہے ۔ چونکہ الیکشن کمیشن قانون سازی نہیں کرسکتا اس لیے اس ٹیسٹ کے لیے مناسب فورم سے رجوع کیا جائے ۔

مزید : صفحہ آخر