امریکہ نے اسرائیل کی حمایت میقں اقوام متحدہ کلی انسانی حقوق کونسل کو چھوڑ دیا

امریکہ نے اسرائیل کی حمایت میقں اقوام متحدہ کلی انسانی حقوق کونسل کو چھوڑ ...

واشنگٹن (اظہر زمان، بیوروچیف) امریکہ نے اسرائیل کی حمایت میں اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کو چھوڑ دیا ، یہ اعلان امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو اور اقوام متحدہ میں امریکی سفیر نکی ہیلی نے گزشتہ روز مشترکہ پریس کانفرنس میں کیا۔ بھارتی نژاد امریکی مندوب نکی ہیلی نے اپنے اقدام کا سبب یہ بتایا کہ کونسل نے سیاسی تعصب کے تحت اسرائیل کیخلاف جارحانہ رویہ اختیار کر رکھا ہے اور اس طرح وہ انسانی حقوق کے غاصبوں کی ہم نوا بن چکی ہے۔ انہوں نے کونسل کی پالیسیوں میں تبدیلی لانے اور اس میں اصلاح کرنے کی بہت کوششیں کیں ، لیکن ہمیشہ انہیں ناکامی کا سامنا ہی کرنا پڑا ۔ انہوں نے بنیادی طور پر روس، چین، کیوبا اور مصر کو اس ناکامی کا ذمہ دار قرار دیا۔ امریکی وزیر خارجہ نے انسانی حقوق کونسل پر تنقید کرتے ہوئے اس کے رویے کو ’’منافقت کی بے شرم مشق‘‘ قرار دیا۔ امریکی میڈیا نے امریکہ کی طرف سے کونسل سے علیحدگی کے اعلان کو نشر کرنے کے بعد اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کی کئی عالمی تنظیموں کا اس پر ردعمل بھی ساتھ ہی شامل کیا، جنہو ں نے ٹرمپ انتظامیہ سے اس فیصلے پر نظرثانی کا مطالبہ کیا۔ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتوینوگو تیرس کے ترجمان نے انکا بیان جا ر ی کیا ہے، جس میں انہوں نے یہ خواہش ظاہر کی ہے کہ امریکہ بدستور کونسل کا حصہ بنا رہے، کیونکہ یہ کونسل دنیا بھر میں انسانی حقوق کے تحفظ اور اس کے بارے میں آگہی پیدا کرنے میں اہم کردار ادا کر رہی ہے۔

مزید : علاقائی