بہاولنگر: سیاسی افق پر امیدواروں کی گہما گہمی کا سلسلہ عروج پر پہنچ گیا

بہاولنگر: سیاسی افق پر امیدواروں کی گہما گہمی کا سلسلہ عروج پر پہنچ گیا

بہاولنگر(ڈسٹرکٹ رپورٹر) جنرل الیکشن 2018ء کا سورج طلوع ہوتے ہی سیاسی اُفق پر اُمیدواروں میں گہما گہمی اپنے عروج کو پہنچ چکی ہے۔ ہر سیاسی پارٹی، سیاسی اُمیدوار ایک بار پھر (بقیہ نمبر26صفحہ12پر )

سے عوام کے دروازے پر ووٹ مانگنے کیلئے بنائی گئی تجاویز کو عملی جامہ پہنانے کیلئے متحرک نظر آر ہا ہے ۔الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے اُمیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کا سلسلہ مکمل ہوتے ہی کاغذات نامزدگی منظور ہونے کے فوراََ بعد سیاسی اُمیدواروں نے اپنی اپنی کامیابی کیلئے پر تولنا شروع کر دیئے ہیں۔ سیاسی مہم کا آغاز عوام سے ملنسار پارٹیوں کی شکل میں کیا جا رہا ہے جبکہ اسکے نتیجہ میں اپنے حلقہ جات میں کبھی دکھائی نہ دینے والے سیاسی احباب عوام کی ہر خوشی، غمی میں شریک ہوتے دکھائی دے رہے ہیں۔ سیاسی موسم کی گرماہٹ اس قدر بڑھ چکی ہے کہ ہر عام و خاص شخص کی زبان سے سیاست ، سیاست اور صرف سیاسی منظر نامہ پر بحث و مباحثہ ہو رہا ہے جبکہ عام عوام نے بھی اپنے اپنے حلقہ جات میں کبھی نہ دکھائی دینے والے سیاسی اُمیدواروں سے احتساب کرنے کا راگ الاپنا شروع کر رکھا ہے جس کے پیش نظر سیاستدان سیاسی شطرنج کے داؤ پیچ استعمال کرتے ہوئے عوام کو مطمئن کرتے نظر آتے ہیں۔ تاہم ہر سیاسی پارٹی، عوامی نمائندے اپنی اپنی جیت کیلئے بھر پور پر تول رہے ہیں ۔ دریں اثناء سیاسی پارٹیاں اپنے اپنے منشور کو عوام تک کس انداز میں لے کر جائیں گی اور عوام کس قدر انکے منشور پر مطمئن ہوتے ہیں یہ بھی دیکھنا کسی طور معجزہ سے کم نہیں۔سیاسی اُفق پر چمکنے والے ستاروں کا حتمی فیصلہ 25جولائی کو الیکشن2018ء کے اختتام پر ہی معلوم ہو سکے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر