وفاقی حکومت کا کراچی ترقیاتی پیکیج لولی پاپ سے کم نہیں،پانی کے مسئلے پروفاقی حکومت، کے ایم سی اور سندھ حکومت مل کر کام کرے:بیرسٹر مرتضیٰ وہاب

وفاقی حکومت کا کراچی ترقیاتی پیکیج لولی پاپ سے کم نہیں،پانی کے مسئلے پروفاقی ...
وفاقی حکومت کا کراچی ترقیاتی پیکیج لولی پاپ سے کم نہیں،پانی کے مسئلے پروفاقی حکومت، کے ایم سی اور سندھ حکومت مل کر کام کرے:بیرسٹر مرتضیٰ وہاب

  


کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے رہنما اور صوبائی مشیر مشیر اطلاعات بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کا کراچی ترقیاتی پیکج لولی پاپ سے کم نہیں ہے ،وفاقی بجٹ میں ایک سو باسٹھ ارب کا کہیں ذکر نہیں ہے،سندھ حکومت دستاویز پر یقین کرتی ہے کل ایک اہم شخصیت نے میڈیا پر اس بات کا اعلان کیا کہ بیالیس ارب کراچی کے کاموں پر خرچ کررہے ہیں،گورنر صاحب کب تک کراچی والوں کے ساتھ مذاق کرینگے؟۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےبیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا کہ مدینے کی ریاست کے وزیراعظم نے کراچی کو صرف سوا تین ارب رو پے کی سکیمیں دی ہیں، وفاق نے کہا تھا کہ کراچی میں گرین لائن بس ہم اکیلے چلا لینگے لیکن پی ٹی آئی حکومت نے کراچی میں ایک بھی بس نہیں چلائی، خدارا غلط بیانی کرنا چھوڑ دیں، کراچی والوں کے سامنے آپ بے نقاب ہوچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کل ہم نے وزیراعظم کے گھوٹکی دورے پر اعتراضات اٹھائے تھےاورہماری پریس کانفرنس کے بعد الیکشن کمیشن نے وزیراعظم گورنر اور وفاقی کابینہ ارکان کے خلاف انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا نوٹس لیا ہے، ہمارے اعتراضات پر وزیراعظم اور گورنر سندھ کو شوکاز نوٹس مل چکا ہے، امید ہے الیکشن کمیشن شوکاز نوٹس تک محدود نہیں رہے گا ،الیکشن کمیشن مزید قا نو نی کاروائی بھی کر ے گا۔

انہوں نے کہا کہ کسی بھی رکن اسمبلی کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنا سپیکر کا کام ہے ،گورنر سندھ نے سندھ اسمبلی اجلاس بلانے کی درخواست پر جعلی دستخط کا کہہ کر مضحکہ خیز اقدام کیا۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی