اندھے قتل کا سراغ‘ بیوی نے آشنا سے ملکر شوہر مار ڈا لا‘ دونوں گرفتار

اندھے قتل کا سراغ‘ بیوی نے آشنا سے ملکر شوہر مار ڈا لا‘ دونوں گرفتار

  

چوک سرورشہید(نا مہ نگار) ڈی ایس پی کوٹ ادومنور بزدار نے تھانہ چوک سرورشہید میں ایس ایچ او اسلم ملغانی کے ہمراہ پریس کانفرنس کی اور بتایا کہ پولیس تھانہ سرورشہید نے ایک سال (بقیہ نمبر25صفحہ12پر)

قبل ہونے والے اندھے قتل کا سراغ لگا لیا ہے اور قاتلوں کو بے نقاب کرکے گرفتار بھی کرلیا گیا ہے اور ملزمان نے اعتراف جرم بھی کرلیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپریل 2018 کی مورخہ 12/13 کی درمیانی شب چوک سرورشہید کے محلہ جناح کالونی میں محمد وارث نامی شخص کے کرنٹ لگ کر مرنے کی اطلاع ملی۔ اس کی بیوی کشور بانو نے کہا کہ اس کے شوہر محمد وارث کو کرنٹ لگا ہے۔ معمول کی کارروائی کے بعد نعش ورثا ء کے حوالے کردی گئی تھی۔لیکن جب مقتول کو نہلانے اور کفن دفن کا وقت آیا تو اس کے منہ سے خون جاری تھا۔ جبکہ جس کو کرنٹ لگے تو اس کا خون جم جاتا ہے۔ مقتول کے بھائی محمد رمضان کو شک قتل ہوا اس نے پولیس تھانہ سرورشہید کو درخواست گزاری کہ قتل کا مقدمہ درج کیا جائے اور بذریعہ عدالت قبر کشائی بھی کروائی گئی۔ دوران تفتیش ہمیں پتہ چلا کہ ایک 60/65سالہ بزرگ عبدالمجید جو کہ مقتول کی بیوی کشور بانو کو اپنی بیٹی کہتا تھا وہ اس مقتول کی بیوی کے ساتھ ساتھ رہتا تھا۔ جس پر ہمیں بھی شک گزر ا۔ قبر کشائی کا میڈیکل رزلٹ آنے کے بعد ہم نے عبدالمجید اور کشور بانو کو تفیش کے بلایا تو پتہ چلا کہ دونوں نے آپس میں نکاح کرلیا ہوا ہے۔جس پر ہم نے انہیں گرفتار کرکے تفتیش کی تو پتہ چلا ددنوں کے آپس میں ناجائز تعلقات تھے اور دونون نے مل کر رات کو محمد وارث کو سرہانہ منہ پر رکھ کر قتل کیا اور بعد میں اسے کرنٹ لگاتے رہے۔اور وارث کو ہٹانے کے لئے کشور بانو اور عبدالمجید نے مل کر قتل کا پروگرام ترتیب دیا۔اور کشور بانو کی عمر 30سال جبکہ اس کے آشنا کی عمر 65 سال کے قریب تھی۔ڈی ایس پی کوٹ ادو منور بزدار نے بتایا کہ یہ اندھا قتل ہمارے لئے ایک چیلنج تھا۔لیکن ہماری پولیس ٹیم ایس ایچ او انسپکٹر اسلم ملغانی اور تفیشی محمدافضل چوہدری نے میری ہدایات پر عمل کرتے ہوئے بڑی محنت کرکے ان دونوں قاتلوں کو گرفتار کرکے حالات و واقعات سے پردہ اٹھایا اور دونوں اپنے کئے پر نادم بھی تھے اور انہیں جیل بھجوادیا گیا ہے۔اس موقع پر مقتول کے وارثان بڑے خوش دکھائی دئے۔ ملزمان کو کیفر کردار پر پہنچانے پر محمد رمضان اور اہلیان علاقہ نے پولیس کو خراج تحسین پیش کیا اور اس موقع پر بات کرتے ہوئے محمد رمضان کی آنکھوں میں آنسو بھی آگئے۔ ڈی ایس پی منور بزدار نے کہا کہ میں بھی پولیس تھانہ سرورشہید کی اس شاندار کارکردگی پر انہیں شاباش دیتا ہوں۔

اندھا قتل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -