لاہور میں فرد، انتقال پر 4ماہ سے عائد پابندی ختم کردی گئی 

لاہور میں فرد، انتقال پر 4ماہ سے عائد پابندی ختم کردی گئی 

  

لاہور(آئی این پی) شہریوں کیلئے اچھی خبر، فردوں اور انتقال پر پابندی ختم کردی گئی، بورڈ آف ریونیو کی جانب سے ڈسٹرکٹ ریونیو اتھارٹی کو احکامات مل گئے۔ ڈپٹی کمشنر ریونیو اویس ملک کے مطابق شہر میں موجود پانچ تحصیلوں 358موضع جات اور 253پٹوار سرکل کے دروازے شہریوں کیلئے کھل گئے، ڈسٹرکٹ ریونیو ذرائع کیمطابق عدالت عظمیٰ کے فرد اجرا پر پابندی کے فیصلے سے شہر کو 12 ارب 50کروڑ کے ڈسٹرکٹ ریونیو کا نقصان ہوا ہے، شہریوں کی 75 ہزار رجسٹریاں اور انتقالات نہ ہو سکے، تقریبا چار ماہ سے زائد عرصہ تک رجسٹریوں اور انتقال کا سلسلہ بند رہا روزانہ کی بنیاد پر علامہ اقبال زون میں 100، نشتر زون میں 200اور واہگہ میں 50رجسٹریاں التوا کا شکار رہیں، راوی میں 45، داتا گنج بخش زون میں 25، سمن آباد، گلبرگ، شالیمار اور عزیز بھٹی زون میں اوسطا روزانہ 200رجسٹریاں التوا کا شکار رہیں، رجسٹریوں اور فردوں کی بحالی سے شہریوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی عدالت عظمی کی جانب سے لینڈ ریکارڈ آرڈیننس 1967 کے تحت پٹواریوں کو فرد اور انتقال سے روکا گیا تھا، لینڈ ریکارڈ ایکٹ میں ترمیم کے بعد پٹورایوں کو فرد اور انتقالات جاری کرنے کی اجازت دی گئی۔

پابندی

مزید :

صفحہ آخر -