سینیٹ کی قائمہ کمیٹی خزانہ نے فنانس  بل میں ٹیکسوں میں اضافہ مسترد کر دیا 

    سینیٹ کی قائمہ کمیٹی خزانہ نے فنانس  بل میں ٹیکسوں میں اضافہ مسترد کر ...

  

 اسلام آباد (این این آئی)سینیٹ کی قائمہ کمٹی خزانہ نے فنانس بل میں ٹیکسوں میں اضافہ مسترد اور ڈالر کی قیمت ایک سو پچاس روپے پر برقرار رکھنے اورحکومت کو لگژری اشیا کی درآمد میں کمی اور برآمدات بڑھانے کی سفارش کی ہے۔ گزشتہ روز فاروق نائیک کی زیرصدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی خزانہ کا اجلاس پارلیمنٹ ہاؤس میں ہواجس میں آئندہ مالی سال کیلئے انکم ٹیکس آرڈیننس 2001 کی شقوں میں ترامیم کا جائزہ لیا گیا،اپوزیشن ارکان نے فنانس بل کو مکمل طور پر مسترد کرنے کی تجویز دی تو پی ٹی آئی کے سینیٹر محسن واک آؤٹ کرگئے،سینیٹر محسن عزیز نے کہا کہ ٹیکس کولیکشن ضروری ہے اس ملک کے لیے وہاں پر یہ بھی دیکھا جائے کہ غریب آدمی پر ٹیکس نہ لگے،اکانومی کا پہیہ چلتا رہے۔کمیٹی نے فنانس بل میں ٹیکسوں میں اضافہ مسترد کردیا۔سینیٹر طلحہ محمود نے کہا کہ ہرچیز مہنگی کرکے بوجھ غریب عوام پر ڈالا جارہا ہے۔طلحہ محمود نے کہا کہ پورے فنانس بل کا تو نہیں لیکن جو غریب آدمی پر ٹیکس لگایا گیا ہے اس کو ہم نہیں مانتے۔قائمہ کمیٹی نے ڈالر کی قیمت 150 روپے پر برقرار رکھنے کی سفارش کرتے ہوئے اسٹیٹ بینک کو ڈالر اس نرخ پر منجمند کرنے کے لیے اقدامات کی سفارش کردی۔کمیٹی ارکان نے لگژری اشیا کی درآمد میں کمی اور برآمدات بڑھانے کے لیے اقدامات کی سفارش بھی کردی۔

مزید :

صفحہ آخر -