مالی بے ضابطگیوں کا الزام، سابق ڈی پی اوگجرات ضمانت پر رہا

مالی بے ضابطگیوں کا الزام، سابق ڈی پی اوگجرات ضمانت پر رہا

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ کے مسٹرجسٹس علی باقرنجفی اورمسٹر جسٹس سرداراحمد نعیم پرمشتمل ڈویژن بنچ نے مالی بے ضابطگیوں کے الزام میں گرفتار سابق ڈی پی اوگجرات رائے اعجاز کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دے دیاہے جبکہ سابق ایس پی انوسٹی گیشن گجرات محمد ریاض کی عبوری ضمانت کی درخواست خارج کردی۔کیس کی سماعت شروع ہوئی تو رائے اعجاز کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ درخواست گزار کا تعلق پولیس سروس سے ہے، ان کاپورا کیریئر بے داغ ہے،نیب نے گجرات پولیس فنڈز خردبرد کے الزام میں انہیں گرفتار کیا،نیب کی جانب سے 140ملین روپے اکاؤنٹ میں جانے کا الزام لگایاگیا،پیٹرول پمپ کے مالک نے پلی بار گین کے ذریعے رقم نیب میں جمع کرادی ہے،نیب تفتیش مکمل کرچکا ہے،پولیس افسررائے اعجاز عرصہ سے جیل میں ہیں، عدالت سے استدعاہے کہ انہیں ضمانت پر رہاکرنے کا حکم دیا جائے، نیب کے وکیل نے عدالت میں ملزم رائے اعجاز کے دو بینک اکاونٹس کی ٹرانزیکشنز پیش کیں،نیب کے وکیل نے کہا کہ رائے اعجاز نے پولیس فنڈزمیں کروڑوں روپے کی خردبرد کی،شریک ملزم اور سابق ایس پی محمد ریاض قائم مقام ڈی پی او گجرات کی حیثیت سے رقم نکلواتا رہا۔

،فاضل بنچ نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد پولیس افسررائے اعجاز کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دے دیاہے جبکہ سابق ایس پی انوسٹی گیشن گجرات محمد ریاض کی عبوری ضمانت خارج کردی ہے۔

مزید :

علاقائی -