کسانوں کی مدد سے زرعی پیداوار میں بہتری آئے گی، ہائر پاکستان

کسانوں کی مدد سے زرعی پیداوار میں بہتری آئے گی، ہائر پاکستان

  

لاہور (پ ر)بائر پاکستان کراپ سائنس ڈویژن نے 18 جون 2019ء کو ساہیوال میں فارمر لرننگ سینٹر کا انعقاد کیا جس کا مقصد کاشتکاری کے جدید تجربات اپنانے کو فروغ دینا اور بائر کی جدید ٹیکنالوجی اور اعلیٰ معیار کے بیجوں کی اقسام کی نمائش کرنا تھا۔ ایک روزہ ایونٹ میں 350 سے زائد کسانوں کو زیر ٹرائل مکئی کی بڑی فصلوں کا دورہ کرنے کا موقع فراہم کیا گیا اور انہیں جدید زرعی مصنوعات اور ٹیکنالوجی کے بارے میں عملی مظاہرہ اور تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ فصلوں کے ٹرائلز اور مظاہروں کے علاوہ تکنیکی ماہرین نے جدید کراپ ٹیکنالوجی اور جدید زرعی طریقوں کے ذمہ دارانہ استعمال کو فروغ دینے کیلئے اسٹیورڈ شپ کی اہمیت پر زور دیا۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے بائر پاکستان کے منیجنگ ڈائریکٹر اور CEO ڈاکٹر عمران احمد خان نے کسانوں کے لئے مفید جدید مصنوعات اور سلوشنز کی فراہمی کیلئے بائر کے عزم کو دہرایا۔ انہوں نے کہا کہ جدید ٹیکنالوجی کی فراہمی اور بہترین ایگرونومک طریقوں کو فروغ دیتے ہوئے ہم زرعی پیداوار کو بہتر بنانے کے لئے کسانوں کی مدد کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ٹیکنالوجی پر مبنی طریقے جدید زرعی سائنس سے جڑے ہوئے ہیں اور ان کا مقصد بڑھتی ہوئی آبادی کی ضروریات کو پورا کرنا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہماری کوششوں کے باعث گزشتہ 20 سالوں سے مکئی کی اوسط پیداوار میں چار گنا اضافہ ہوا۔ اعلیٰ کارکردگی کی حامل ہائی برڈ مکئی متعارف کراتے ہوئے بائر نے کسانوں کی زرعی پیداوار اور منافع میں اضافہ کیلئے مدد کی اور ہم پاکستان میں جدید ہائی برڈ مکئی اور جدید ترین ٹیکنالوجی لانے کا سلسلہ جاری رکھیں گے۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پیداوار میں نمایاں بہتری کے باوجود فصل ڈاؤن اسٹریم انڈسٹری کی مطلوبہ طلب کو پورانہ کرسکے۔ تمام مکئی کا 70 فیصد حصہ پولٹری کی صنعت میں چلا جاتا ہے۔

اور یہ صنعت 10 سے 12 فیصد سالانہ کی شرح سے بڑھ رہی ہے۔ موجودہ شرح پر پولٹری کی صنعت کی جانب سے طلب 2023ء تک 7 ملین ٹن سے زائد بڑھنے کی توقع ہے۔ پاکستان میں مکئی کی مجموعی پیداوار 6 ملین ٹن سے زائد بڑھنے کے باعث جدید زرعی ٹیکنالوجی کا استعمال لازمی ہو گیا ہے اور یہ مستقبل میں کاشت و پیداوار کے لئے کلید کی حیثیت اختیار کر جائے گی۔ساہیوال سے ایک ترقی پسند کسان محمد افضل نے اس یقین کا اظہار کیا کہ فصلوں میں تکنیکی سیشنز اور عملی مظاہرہ سے کسانوں نے مکئی کے ہائی برڈ بیجوں کی ٹیکنالوجی کے فوائد اور فصلوں کے تحفظ کے آلات سے سیکھنے کا تجربہ حاصل کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ لرننگ سینٹر نے تکنیکی ماہرین کے ساتھ بات چیت کے لئے ایک مثالی پلیٹ فارم کی حیثیت سے کردار ادا کیا اور اس سے ایسی معلومات حاصل ہوئیں جو فصلوں اور پیداوار میں بہتری کیلئے معاون ہوں گی۔

مزید :

کامرس -