وزیراعظم آفس کے اخراجات بجٹ کے مقابلے میں 32 فیصد کم ہوئے،وزارت خزانہ

وزیراعظم آفس کے اخراجات بجٹ کے مقابلے میں 32 فیصد کم ہوئے،وزارت خزانہ

  

اسلام آباد (آئی این پی)وزارتِ خزانہ نے وزیراعظم آفس کے بجٹ و اخراجات کے بارے میں وضاحت کرتے ہوئے کہاہے کہ موجودہ مالی سال 2018-19ء کیلئے وزیراعظم آفس کا مالیاتی تخمینہ 98 کروڑ 60 لاکھ روپے تھا، وزیراعظم آفس نے کفایت شعاری کی ابتدا اپنے ہی آفس سے کی اور نہایت کامیابی سے رواں مالی سال کے جون تک کے اخراجات کو 67 کروڑ 50 لاکھ روپے میں مکمل کر دیااور یوں اخراجات میں 32 فیصدنمایاں بچت کی۔ ترجمان وزارت خزانہ نے وضاحتی بیان میں کہاکہ وزارتِ خزانہ حکومت پاکستان یہ ضروری سمجھتی ہے کہ وزیراعظم پاکستان آفس کے بجٹ و اخراجات کے بارے میں میڈیا میں پائے جانے والے ابہام کو دور کرنے کیلئے وضاحت کی جائے۔وزیراعظم آفس دو حصوں پر مشتمل ہے۔ ترجمان نے کہاکہ وزارتِ خزانہ مزید اس بات کی وضاحت کرتی ہے کہ وزیراعظم آفس کیلئے بجٹ برائے مالی سال 2019-20ء میں 86 کروڑ 29 لاکھ روپے مختص کئے گئے جو کہ جاری مالی سال کے مقابلے میں 12 فیصد کم ہیں۔ بڑھتے ہوئے افراطِ زر، تنخواہوں میں اضافہ اور دیگر انتظامی اخراجات کے تقاضوں کے باوجود وزیراعظم آفس کے اخراجات کیلئے بجٹ کا تخمینہ کم از کم رکھا گیا ہے تاکہ وفاقی حکومت کی دیگر وزارتوں کیلئے قابل عمل مثال پیش کی جاسکے۔

وزارت خزانہ/وضاحت

مزید :

صفحہ اول -