وزیراعلیٰ سندھ سے ایرانی پارلیمانی وفد کی ملاقات،مختلف امور پر گفتگو

وزیراعلیٰ سندھ سے ایرانی پارلیمانی وفد کی ملاقات،مختلف امور پر گفتگو

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)ایران کے ایک چھ رکنی پارلیمانی وفد نے جمعرات کو وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ سے وزیراعلی ہاؤس میں ملاقات کی۔ملاقات میں باہمی تجارت کے فروغ، پارلیمانی وفود، تعلیم اور تجارتی وفود کے تبادلے اور ایک دوسرے کے تجربوں اور مہارت بالخصوص ادویات، زراعت اور لائیو اسٹاک کے شعبوں میں فائدہ اٹھانے سمیت مختلف باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیاگیا۔ ایران کے وفد کی سربراہی احمد امیر عابدی فرھانی کر رہے تھے جبکہ وفد کے دیگر اراکین میں محمد باسط درازئی، محمد رضا، سید مرتضی خاتمی، محمد حسینی، علی یوسفی احمد محمدی شامل تھے، جبکہ وزیراعلی سندھ کے مشیر مرتضی وہاب، وزیراعلی سندھ کے پرنسپل سیکریٹری ساجد جمال ابڑو بھی ملاقات میں شریک تھے۔وزیراعلی سندھ نے کہا کہ ایران نے زراعت اور لائیواسٹاک کے شعبوں میں نمایاں ترقی کی ہے۔انہوں نے کہا کہ سندھ ایران کے زراعت اور لائیو اسٹاک کے شعبوں کے تجربات اورمہارت سے مستفیض ہونے کا خواہاں ہے۔ وزیراعلی سندھ نے کہا کہ مسلم دنیا کو چاہیے کہ وہ اپنے اندر اتحاد پیدا کریں تاکہ اسلام کے دشمنوں کے خلاف مل کر لڑائی لڑی جاسکے۔ایران کے وفد نے ایران اور پاکستان اور دیگر مسلم ممالک کے درمیان اشیا اور کرنسیز کے تبادلے کے ذریعے باہمی تجارت کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ اس سے مقامی معیشت کومستحکم اور بہتر بنانے میں مدد حاصل ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو چاہیے کہ وہ ایران۔ پاکستان گیس پائپ لائن کے نامکمل منصوبے کو دوبارہ شروع کرے۔ ملاقات میں آئے ہوئے وفد نے وزیراعلی سندھ کو مشہد کے دورے کی دعوت دی جوکہ انہوں نے قبول کرتے ہوئے کہا کہ وہ جلد دورہ کریں گے۔ وزیراعلی سندھ نے پارلیمانی وفد کے اراکین کو اجرک اور سندھی ٹوپیوں کے تحائف پیش کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمانی وفود کے دوروں سے دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات مزید مستحکم ہوں گے۔

مزید :

صفحہ اول -