وزیر اعظم کو گھوٹکی ضمنی الیکشن تک معطل کیا جائے،سعید غنی

وزیر اعظم کو گھوٹکی ضمنی الیکشن تک معطل کیا جائے،سعید غنی

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیر بلدیات سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم، گورنر سندھ اور دو وفاقی وزراء کو گھوٹکی میں الیکشن کمیشن کے کوڈ آف کنڈیکٹ کی خلاف ورزی پر نوٹس کی بجائے انہیں وہاں الیکشن تک معطل کیا جائے۔ نیب اور اس کا چیئرمین اس وقت حکومت کے ہاتھوں یرغمال ہیں اور ان سے کوئی بعید نہیں کہ وہ کسی کو بھی اور کبھی بھی گرفتار کرسکتے ہیں۔ وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ ہی رہیں گے اور ان پر پارٹی کے تمام ارکان کا مکمل اعتماد ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز سندھ اسمبلی میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ صحافیوں کے سوالات کے جواب میں وزیر بلدیات سندھ نے کہا کہ میڈیا میں آج اس بات کو واضح کیا گیا ہے کہ گذشتہ روز وزیر اعظم نے گورنر سندھ اور دیگر دو وفاقی وزراء اور کچھ ایسے ارکان کے ساتھ گھوٹکی میں تعزیت کے نام نہ صرف وہاں الیکشن لڑنے والے امیدوار سے ملاقات کی ہے بلکہ اس امیدوار نے وزیر اعظم سے کچھ مطالبات کئے تو اس پر انہوں نے انہیں گورنر سندھ سے رابطے میں رہنے کی بھی ہدایات دی ہے۔ سعید غنی نے کہا کہ یہ اچھی بات ہے کہ اس بات کی شکایت پر عمران خان کو نوٹسدیا ہے لیکن نوٹس پر کچھ نہیں ہونا ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ الیکشن کمیشن اس خلاف ورزی پر وزیر اعظم، گورنر سندھ اور ان دو وفاقی وزراء جو ان کے ساتھ ہیں ان کی رکنیت اس وقت تک معطل کرے جب تک وہاں الیکشن مکمل نہیں ہوجاتے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم اور دیگر وہاں الیکشن پر اثر انداز ہونے گئے تھے اور ہم صرف نوٹس پر اظمینان نہیں کرسکتے۔

مزید :

صفحہ اول -