بیوہ کو پنشن نہ دینے پر اکاؤنٹ آفیسر کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری

بیوہ کو پنشن نہ دینے پر اکاؤنٹ آفیسر کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس اکرام اللہ خان اور جسٹس مس مسرت ہلالی پرمشتمل دورکنی بنچ نے ہائیرایجوکیشن کے درجہ چہارم ملازم کی بیوہ کو پنشن نہ دینے پراکاؤنٹ آفیسرپنشن کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کردئیے فاضل بنچ نے خالدرحمان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائرالفت بیگم کی رٹ کی سماعت کی اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذارہ کاشوہرہائرایجوکیشن اینڈ لائبریری ڈیپارٹمنٹ میں درجہ چہارم بھرتی ہواتھا جودوران ملازمت وفات پاگیااس دوران انہوں نے پنشن کے لئے متعلقہ حکام سے رجوع کیالیکن اکاؤنٹنٹ جنرل آفس میں تعینات اکاؤنٹ آفیسرپنشن نے اس پراعتراض لگایاکہ ہائی کورٹ تو ایسے ملازمین کو پنشن کاحقدارقرار دے چکی ہے تاہم اس حوالے سے سپریم کورٹ کافیصلہ آناباقی ہے انہوں نے عدالت کو بتایا کہ صوبائی حکومت نے پشاورہائی کورٹ کے اس فیصلے کو سپریم کورٹ میں توچیلنج کیاہے تاہم سپریم کورٹ نے اس حوالے سے کوئی حکم امتناعی جاری نہیں کیاہے اورنہ ہی کوئی خصوصی ہدایات جاری کی ہیں اوراکاؤنٹ آفیسرپنشن غیرقانونی طورپراس طرح کے فرائض سرانجام دے رہا ہے اور پشاورہائی کورٹ نے گذشتہ پیشی پراسے طلب کیاتھالیکن وہ آج بھی غیرحاضرہے جس پرعدالت نے اکاؤنٹنٹ جنرل آفس کے اکاؤنٹ آفیسرپنشن کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کرتے ہوئے اگلی سماعت پرطلب کرلیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -