لاکھوں روپے جعلی کرنسی سمگل کرنے کی کوشش ناکام تین ملزمان گرفتار

لاکھوں روپے جعلی کرنسی سمگل کرنے کی کوشش ناکام تین ملزمان گرفتار

  

پشاور(کرائمز رپورٹر) کپیٹل سٹی پولیس پشاور نے موٹر کار کے زریعے لاکھوں روپے جعلی کرنسی سمگل کرنے کی کوشش ناکام بنا تے ہوئے تین ملزمان کو گرفتار کر لیا، گرفتار افسراد کا تعلق ضلع کرم ایجنسی سے ہے جنہوں نے ابتدائی تفتیش کے دوران درہ آدم خیل سے جعلی کرنسی سمگل کرنے میں ملوث ہونے کا اعتراف کر لیا ہے، ملزمان کے قبضہ سے 28 لاکھ روپے سے زائد جعلی پاکستانی کرنسی برآمد کرنے کے ساتھ ساتھ سمگلنگ میں استعمال ہونے والی موٹر کار بھی پولیس تحویل میں لے لی گئی ہے، گرفتار تینوں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی۔تفصیلات کے مطابق ایس ایس پی آپریشن ظہور بابر آفریدی کو خفیہ ذرائع سے اطلاع ملی تھی کہ کسی بھی وقت لاکھوں روپے جعلی پاکستانی کرنسی درہ آدم خیل پشاور کے راستے پنجاب سمگل کرنے کی کوشش کی جائیگی،اطلاع کو مصدقہ جان کر شہر کے تمام داخلی راستوں کی نگرانی سخت کرنے کے ساتھ ساتھ رنگ روڈ پر خصوصی ناکہ بندی کرنے کے بھی احکامات جاری کر دیئے گئے۔ڈی ایس پی سبرب عتیق شاہ کی نگرانی میں ایس ایچ او تھانہ آغہ میر جانی شاہ عمر آفریدی، انچارج سائنس کالج پولیس چوکی اے ایس آئی فدا خان اور اے ایس آئی خالد خان رنگ روڈ کاکا خیل سی این جی اسٹیشن کے قریب ناکہ بندی پر موجود تھے کہ اس دوران ایک مشکوک موٹر کار نمبر453کو روک کر تلاشی لینے پر گاڑی سے 28 لاکھ 25 ہزارروپے جعلی پاکستانی کرنسی برآمد کرکے تین ملزمان آصف ولد سردار،منیر خان ولد زرمت خان ساکنان کرم ایجنسی اور محمد خان ولد سہیل خان سکنہ سکیم چوک کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزمان نے ابتدائی تفتیش کے دوران موٹر کار کے زریعے جعلی کرنسی سمگلنگ میں ملوث ہونے کرنے کا اعتراف کر لیا، پولیس نے جعلی کرنسی سمگلنگ میں استعمال ہونے والی گاڑی بھی تحویل میں لیتے ہوئے تھانہ آغا میر جانی شاہ منتقل کر دی جبکہ تینوں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے شروع کر دی گئی ہ

مزید :

پشاورصفحہ آخر -