مہمند ، محکمہ زراعت وایر یگیشن میں مالی سال کے ترقیاتی منصوبوں کے ٹینڈرز میں گھپلوں کا انکشاف

مہمند ، محکمہ زراعت وایر یگیشن میں مالی سال کے ترقیاتی منصوبوں کے ٹینڈرز میں ...

  

مہمند ( نمائندہ پاکستان)مہمند، محکمہ زراعت و ایریگیشن میں مالی سال کے ترقیاتی منصوبوں کے ٹینڈر میں کروڑوں روپے کے گھپلوں کا انکشاف، ڈائریکٹر زراعت اور محکمہ ایری گیشن نے من پسند و سرکاری عہدیدار کے نام کروڑوں روپے کے ٹینڈرز دیئے ہیں۔ ڈائریکٹر زراعت قبائلی اضلاع نے کئی بار بھار ی رشوت کا مطالبہ کیا نہ دینے پر قانونی ٹینڈر کینسل کیا۔ اعلیٰ حکام نوٹس لیکر فوری طور پر تحقیقات کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار مقامی ٹھیکدار یونین کے صدر لعل حاجی بادشاہ، باغی شاہ، خان محمد، جان شیر ، خان ماما و دیگر نے مہمند پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے محکمہ زراعت مالی سال کے لیولنگ، واک ٹنل ایری گیشن ، پودوں اور بیج کی مد میں ڈائریکٹر زراعت و ایریگیشن نے من پسند ٹھیکداروں کے نام پر7 کروڑ روپے کے ٹینڈرزدیئے گئے۔ انہوں نے ڈائریکٹر قبائلی اضلاع پر الزام لگایا کہ وہ مخصوص لوگوں کے ساتھ ملے ہوئے ہیں جبکہ اپنے سرکاری عہدیدار کو بھی 3 کروڑ روپے کا ٹینڈر بغیر کسی اشتہار کے دیا ہے۔ ہم نے اُن کے خلاف عدالت میں بھی کیس جمع کیا ہے۔ مگر اس کے باﺅجود بھی ان کے نام پر کروڑوں روپے نکلواتے ہیں۔ مذکورہ ڈائریکٹر نے کئی بار ہم سے بھاری رشوت کا مطالبہ کیا ہے جس کا ثبوت ہمارے پاس موجود ہے۔ رشوت نہ دینے پر ہمارا قانونی ٹینڈر کو کینسل کرایا۔ جبکہ ڈائریکٹر نے غیر قانونی اور بغیر اشتہار کے کئی ملازمین جن میں 16 سکیل کے ملازمین بھی شامل ہیںکو بھرتی کئے ہیں۔ جبکہ محکمہ ایریگیشن نے کروڑوں روپے کا ٹینڈر جعلی طریقے پر دیا ہے۔ ایم این اے مہمند ساجد خان و اعلیٰ حکام تحقیقات کر کے ملوث اہلکاروں کو کھڑی سے کھڑی سزا دے۔ اور قومی خزانے کے کروڑوں روپے کی ریکوری کر کے واپس کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اب ہم نیب کو جانے کیلئے بھی تیاری کر لی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -