فاٹایونیورسٹی کے12ملازمین کومستقل کرنے کے احکامات جاری

فاٹایونیورسٹی کے12ملازمین کومستقل کرنے کے احکامات جاری

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس وقاراحمدسیٹھ اور جسٹس عبدالشکورپرمشتمل دورکنی بنچ نے فاٹایونیورسٹی کے12ملازمین کومستقل کرنے کے احکامات جاری کردئیے ہیں عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے نظیق الرحمان وغیرہ کی رٹ کی سماعت کی اس موقع پر ان کے وکیل وسیم الدین خٹک نے عدالت کو بتایا کہ 2016 میں فاٹایونیورسٹی میں مختلف کیڈرزکے12ملازمین بھرتی کئے گئے اور2017ءکو اس یونیورسٹی کومستقل بجٹ پرمنتقل کیاگیاقانون کے مطابق جب کسی پراجیکٹ کو مستقل بجٹ پرمنتقل کیاجاتاہے تواس پراجیکٹ کے ملازمین بھی براہ راست مستقل تصورکئے جاتے ہیں اس کے باوجودتاحال درخواست گذاروں کی مستقلی نہیں کی گئی اس حوالے سے پشاورہائی کورٹ اورسپریم کورٹ آف پاکستان کے متعدد فیصلے موجود ہیں عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے دلائل مکمل ہونے پر رٹ منظورکرتے ہوئے ملازمین کو مستقل کرنے کے احکامات جاری کردئیے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -