پاکستان کشمیر کے بغیر نا مکمل ، پاکستان کے بغیر کشمیر کی بھی کوئی شناخت نہیں: جنرل زبیر محمود حیات

پاکستان کشمیر کے بغیر نا مکمل ، پاکستان کے بغیر کشمیر کی بھی کوئی شناخت نہیں: ...
پاکستان کشمیر کے بغیر نا مکمل ، پاکستان کے بغیر کشمیر کی بھی کوئی شناخت نہیں: جنرل زبیر محمود حیات

  

مظفرآباد (صبا ح نیوز) چیئرمین جوائنٹ چیف آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات نے کہا ہے  کہ پاکستان کشمیر کے بغیر نا مکمل ہے اور اسی طرح پاکستان کے بغیر کشمیر کی کوئی شناخت نہیں پاکستان کا کشمیریوں سے خونی ، جذباتی اور روحانی رشتہ ہے جو کبھی ختم نہیں ہو سکتا ۔

ایوان صدر مظفرآباد میں پاکستان انسٹیٹیوٹ فار کفنلیکٹ اینڈ سیکیورٹی سٹڈیز کے زیر اہتمام ’’کشمیر ، پاکستان اینڈ پاکستانیت ‘‘کے عنوان سے سیمینار سے خطاب کرتےہوئے چیرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی  نے کہا کہ کشمیری جتنا خون دے چکے ہیں اُس خون کا قرض چکاناہم پر واجب ہے اور وہ قرض کشمیر کی آزادی کی صورت میں ہی چکایا جا سکتا ہے انہوں نے کہا کہ بابائے قوم قائداعظم محمد علی جناح، سر سید احمد خان دوسرے اکابرین نے جو دو قومی نظریہ پیش کیا تھا اس کی حقانیت اور سچائی آج بھی قائم ہے کیونکہ ہندو اور مسلمان دو دریائوں کی مانند ہیں جو آپس میں ایک دوسرے سے مل تو سکتے ہیں لیکن ایک دوسرے کے اندر ضم نہیں ہو سکتے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور پاکستانیت کا نظریہ نیا نہیں ہے بلکہ یہ دو قومی نظریے کا تسلسل ہے جس کا کشمیری بھی حصہ ہیں،کشمیریوں کی آنکھوں میں آزادی اور حریت کی جو چمک پائی جاتی ہے اسے دنیا کی کوئی طاقت ختم نہیں کر سکتی ۔ جنرل زبیر حیات نے کہا کہ کشمیر کی جدوجہد آزادی کے پیچھے دو قومی نظریے کی طاقت موجود ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم کا بچہ بچہ کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کے ساتھ ہے او ر یہ ساتھ اُس وقت تک رہے گا جب تک کشمیری اپنے مقصد میں کامیابی حاصل نہیں کر لیتے ۔

اس موقع پر آزاد جموں و کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے کہا   کہ پاکستان اور کشمیر باہم لازم و ملزوم ہیں اور ان کے درمیان ایک ایسا رشتہ ہے جو کبھی ٹوٹنے والا نہیں ہے، جموں و کشمیر کے عوام نے پاکستان بننے سے پہلے پاکستانی ہونے کا اعلان کر دیا تھا،کشمیر کبھی بھی بھارت کا حصہ نہیں رہا ہے اور بھارت کشمیریوں کو اپنے ساتھ زبردستی ملائے رکھنے کے لیے آٹھ لاکھ اسی ہزار فوج لے کر حملہ آور ہوا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان بننے سے ایک ماہ پہلے جولائی 1947 ء میں سرینگر کے مقام پر سردار محمد ابراہیم خان کی رہائش گاہ پر کشمیری عوام کی منتخب قیادت نے اپنی قسمت پاکستان کے ساتھ وابستہ کرنے کا جو عہد کیا تھا کشمیری عوام 71 سال گزرنے کے باوجود آج بھی اس پر قائم ہیں اور اس عہد کو پورا کرنے کے لیے قربانیوں کی ایک لا زوال داستان رقم کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک مضبوط مستحکم اور معاشی اعتبار سے طاقتور پاکستان کشمیریوں کی بھارتی غلامی سے آزادی کا واحد ضمانت ہے۔ اس لیے ہم یہ عہد کرتے ہیں کہ پاکستان کو دفاعی، معاشی اور سیاسی اعتبارسے مضبوط اور مستحکم بنانے میں کوئی کسر نہیں اٹھا رکھیں گے

مزید :

قومی -علاقائی -آزاد کشمیر -مظفرآباد -