دو سال تک اپنی سگی بہن کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے 3 بدقسمت پاکستانی بھائی

دو سال تک اپنی سگی بہن کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے 3 بدقسمت پاکستانی ...
دو سال تک اپنی سگی بہن کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے 3 بدقسمت پاکستانی بھائی

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) رب العزت نے انسان کو اشرف المخلوقات بنایا ہے لیکن وہی انسان جب گرنے پر آتا ہے تو ایسی پستی میں جا گرتا ہے کہ شیطان بھی شرم سے پانی پانی ہو جائے۔ اب ان تین درندہ صفت بھائیوں کی سن لیں جو دو سال تک اپنی سگی کم سن بہن کو درندگی کا نشانہ بناتے رہے۔ ویب سائٹ ’پڑھ لو‘ کے مطابق یہ انسانیت سوز واقعہ گولڑا شریف میں پیش آیا ہے جہاں ملزمان میں ایک بھائی مذہبی سکالر ہے جبکہ دو مزدور ہیں۔ یہ تینوں اپنی 14سالہ بہن کو زیادتی کا نشانہ بناتے رہے اورمزید شرمناک بات یہ ہے کہ اسے خدا کی پاک کتاب کی قسم دے کر اتنے عرصے تک چپ کروائے رکھا۔

رپورٹ کے مطابق ان بہن بھائیوں کا تعلق بنیادی طور پر بنوں سے تھا ۔ بھائی پہلے ہی گولڑہ شریف میں رہتے تھے اور چند سال قبل والدین کی موت کے بعد ان کی بہن بھی ان کے پاس رہنے کے لیے آ گئی۔ لڑکی کے آنے کے دو ہفتے بعد ہی ان درندوں نے اسے اپنی ہوس کا نشانہ بنانا شروع کر دیا۔

رپورٹ کے مطابق چند روز قبل لڑکی شدید بیمار پڑ گئی جس پر ایک بھائی اسے ڈاکٹر کے پاس لے گیا۔ اتفاق سے ڈاکٹر اس لڑکی کے باپ کا دوست تھا۔ جب ڈاکٹر نے لڑکی سے تفصیل پوچھی تو اس نے ڈاکٹر پر بھروسہ کرتے ہوئے اسے حقیقت بتا دی جس نے فوری طور پر پولیس کو اطلاع دے دی۔ پولیس نے تینوں بھائیوں کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کر لیا اور عدالت میں پیش کر دیا۔ پولیس کے مطابق تینوں ملزمان نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔ عدالت کی طرف سے ملزمان کو جوڈیشل ریمانڈ پر اڈیالہ جیل بھجوا دیا گیا ہے اور انہوں نے ضمانت کی جو درخواستیں دائر کی تھی وہ مسترد کر دی گئی ہیں۔رپورٹ کے مطابق تینوں بھائیوں نے اپنی بہن سے معافی کی درخواست کی ہے اور بدلے میں اسے رقم اور جائیداد کا لالچ دیا ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد