کورونا کیخلاف مدد کے بجائے وفاق نے الٹا صوبہ کے 229ارب کم کر دیئے:بلاول،سندھ کا 10فیصد حصہ بڑھا:مراد سعید

  کورونا کیخلاف مدد کے بجائے وفاق نے الٹا صوبہ کے 229ارب کم کر دیئے:بلاول،سندھ ...

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ کورونا کی صورتحال میں سندھ کے 229 ارب کم کرنا ناانصافی ہے، پنجاب کو بھی پورے پیسے نہیں دیئے گئے، بجٹ میں وفاق ہر صوبے کیلئے کورونا پیکج دیتا، جب سے وبا آئی ہر متنازعہ مسئلہ چھیڑا جا رہا ہے۔گزشتہ روزیہاں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ شہباز شریف صحت یاب ہو کر آل پارٹیز کانفرنس بلائیں گے، اے پی سی میں این ایف سی ایوارڈ پر مشاورت کریں گے، این ایف سی ایوارڈ کے مسئلے پر تمام اپوزیشن ایک مؤقف دے گی۔ بحرانی صورتحال میں حکومت اتحاد پیدا کرنے کی کوشش کرتی ہے، کورونا شروع ہوتے ہی سیاسی مصروفیات ختم کر دی تھیں، کورونا وائرس پر اپوزیشن نے سیاست نہیں کی، بجٹ ان کے اپنے ایم این اے اور ایم پی ایز کے حلقوں میں کام کیلئے بنایا گیا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کرائسز کے وقت بھی سیاست کر رہے ہیں، سندھ کے وزیراعلیٰ سے لے کر وزرا کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا، پی ٹی آئی حکومت کو اپنی روایت بدلنی چاہئے، این ایف سی ایوارڈ کا نوٹیفکیشن غیر قانونی ہے، پی ٹی آئی اپنی روایت بدلے اور سنجیدگی سے چیلنجز کا سامنا کرے۔ ریاست پر مشکل وقت آتا ہے تو حکومت اتحاد قائم کرتی ہے، بجٹ میں ٹڈی دل سے بچاؤ کیلئے بھی وسائل نہیں رکھے گئے، کورونا سے نمٹنے کیلئے حکومت کی جانب سے صوبوں کی معاونت نہیں کی گئی، 2 سال سے مطالبہ کر رہے ہیں وفاق کو پانی کے منصوبے پر خرچ کرنا چاہیے۔ دوسری جانب وفاقی وزیر برائے مواصلات مراد سعیدنے بلاول بھٹو زرداری کے بیان پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ پیپلزپارٹی خودکچھ کرتی ہے نہ دوسروں کوکرنے دیتی ہے۔ بلاول بھٹو کو خیبرپختونخوا دورے کی دعوت دیتا ہوں، انہیں دکھاؤں گا خیبرپختونخوا میں 7سالوں میں کیا کیا، پی پی چیئرمین ہمیں بھی سندھ میں دکھائیں، انہوں نے اب تک کیا کیا؟۔ بلاول بھٹوکی سیاست صرف بیانات تک محدود ہے، احساس پروگرام پربھی بلاول سیاست کرتے ہیں۔مراد سعید نے کہا کہ غربت کے لحاظ سے فنڈزمختص ہونے سے سندھ کا 10 فیصدحصہ بڑھا۔ عمران خان پورے ملک کے وزیراعظم ہیں۔ بلاول جس حلقے سے منتخب ہوئے وہ ابھی بھی پسماندہ ہے۔ وزیراعظم نے لاڑکانہ میں احساس سینٹر پروگرام کادورہ کیا۔ وہ کوروناسے متاثرہ افراد کیلئے ہرجگہ پہنچیں گے۔ پیپلزپارٹی نے سندھ کے عوام کے زخموں پرمرہم نہیں رکھا۔ ملک سے غربت کاخاتمہ وزیراعظم کامشن ہے، گورنر سندھ عمران اسماعیل نے بھی مستحقین تک امدادپہنچائی، شہریوں کے مسائل حل کرنے پرآپ سیاست شروع کردیتے ہیں۔ کراچی میں پانی کامسئلہ بناہواہے، ٹڈیوں کے حملے سے سندھ میں چھوٹے کسانوں کانقصان ہورہاہے۔ سندھ جہاں ٹڈیوں کاحملہ ہوا،وہاں حکومت نے گاڑیاں ہڑپ کرنیکامنصوبہ بنالیا۔ سندھ حکومت نے راشن دینے کا وعدہ کیا لیکن دیا کسی کو نہیں۔انہوں نے کہا کہ این سی اوسی میں تمام صوبوں کو آن بورڈ لیا جاتا ہے۔ بلاول کاچیلنج قبول کرتاہوں اورانہیں خیبرپختونخوا آنیکی دعوت دیتاہوں، میں خودبھی سندھ آؤں گااور ہسپتالوں کادورہ کروں گا،بلاول صحت کی مد میں ملنے والے ساڑھے 5کھرب کا جواب نہیں دے سکے۔مراد سعید نے کہاکہ لیگی قیادت نے کوئی بہتر ہسپتال نہیں بنایا، 70 سال ملک پرحکومت کرنیوالے باہر سے علاج کرارہے ہیں۔

بلاول

مزید :

صفحہ اول -