واشنگٹن میں مظاہرین نے کنفیڈریشن ھامی جنرل الربٹ پائیک کا مجسمہ گرا کر جلا دیا

واشنگٹن میں مظاہرین نے کنفیڈریشن ھامی جنرل الربٹ پائیک کا مجسمہ گرا کر جلا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) امریکہ میں غلامی کے خاتمے کے دن ”جون ٹینتھ“ کے موقع پرمشتعل مظاہرین نے واشنگٹن ڈی سی میں کنفیڈریشن کے حامی بریگیڈئیر جنرل الربٹ پائیک کا مجسمہ نیچے گرا کر جلا دیا،اس موقع پر پولیس موجود تھی لیکن اس نے مداخلت نہیں کی اور مظاہرین کو کھل کر غم و غصے کا اظہار کرنے دیا۔صدرڈونلڈ ٹرمپ نے واقعہ پر اظہار افسوس کرتے ہوئے اسے دارالحکومت کی پولیس کی نااہلی قرار دیا اور کہا کہ پولیس مظاہرین کو گرفتار کرنے کی بجائے تماشہ دیکھتی رہی۔ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے وفاق کے قیام کے موقع پر جنو ب کی کچھ ریاستیں فیڈریشن کی بجائے کنفیڈریشن قائم کرنے کی حامی تھیں اور اس کنفیڈریشن کے حامی آج بھی امریکہ میں موجود ہیں، کنفیڈ ریشن کی فوجیں فیڈریشن کی فوجوں سے لڑتی رہیں،لیکن بالآخر شکست کھا گئیں۔ مجسمہ گرانے والے مظاہرین وہی تھے، جو 25 مئی کے بعد سیاہ فام جارج فلائیڈ کی سفید فام پولیس افسر کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد مسلسل امریکہ کے مختلف شہروں میں نسلی منافرت کیخلاف احتجاج کر رہے ہیں۔ صدر ٹرمپ نے سٹی میئر سیاہ فام خاتون مورئیل باؤسر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ان مظاہرین کو فوراً گرفتار کیا جانا چاہئے کیونکہ وہ ملک کیلئے بدنامی کا باعث بنے ہیں، مظاہرین مجسمہ گرانے کے بعد دوبارہ وائٹ ہاؤس کے قریب لیفیٹ پارک میں چلے گئے جہا ں سے وہ آئے تھے۔
واشنگٹن مظاہرین

مزید :

صفحہ اول -