کراچی،پولیس اور رینجرز پر بم حملے کامقدمہ 5نامعلوم ملزموں کیخلاف درج

کراچی،پولیس اور رینجرز پر بم حملے کامقدمہ 5نامعلوم ملزموں کیخلاف درج

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)شہر قائدکے علاقے لیاقت آباد میں دھماکے کا مقدمہ نامعلوم دہشت گردوں کے خلاف درج کر لیا گیا۔گزشتہ روز لیاقت آباد میں احساس پروگرام مرکز کے قریب دستی بم حملے میں ایک شخص جاں بحق اور رینجرز اہل کار سمیت آٹھ افراد زخمی ہوئے تھے۔ لیاقت آباد دھماکے کا مقدمہ سی ٹی ڈی تھانے میں سرکار کی مدعیت میں انسداد دہشتگردی سمیت دیگر دفعات کے تحت نامعلوم دہشتگردوں کے خلاف درج کیا گیا ہے۔ مقدمے میں پولیس کی جانب سے انکشاف کیا گیا ہے کہ یہ حملہ پانچ نوجوان ملزمان نے کیا اور حملہ آوروں نے تعاقب کرنے پر پولیس پر فائرنگ بھی کی اور جوابی فائرنگ کے دوران رش کی وجہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔ مدعی مقدمہ پولیس افسر عابد علی شاہ نے کہاہے کہ گزشتہ روز سوا 11 بجے وہ پولیس اہلکاروں کے ہمراہ انجمن اسلامیہ اسکول لیاقت آباد نمبر 10 میں احساس پروگرام کی سیکورٹی ڈیوٹی چیک کرنے کے لیے پہنچے تو فلائی اوور پر پینٹ شرٹ اور شلوار قمیض پہنے 5 مشکوک ملزمان کو دیکھا۔ ان پانچ میں سے ایک ملزم نے فلائی اوور کے اوپر سے احساس پروگرام پر تعینات رینجرز اور پولیس کی گاڑی پر بارودی مواد پھینکا جس سے دھماکا ہوا۔ ملزمان موٹر سائیکلوں پر فرار ہو رہے تھے تو انہوں نے پولیس پارٹی کے ساتھ ملزمان کا تعاقب کیا تو ملزمان نے 30 بور پستول سے فائرنگ کردی، پولیس اہلکاروں نے بھی نائن ایم ایم اور سب مشین گنوں سے جوابی فائرنگ کی تاہم ملزمان رش کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہوگئے۔ حملہ آوروں کی جانب سے فائر کئے گئے 30 بور پستول کے فائر شدہ 7 خول قبضے میں لے لئے گئے ہیں۔

مقدمہ درج

مزید :

صفحہ آخر -