وہاڑی: مختلف علاقوں میں غیر قانونی تیل ایجنسیاں‘ بڑے حادثے کا خدشہ

وہاڑی: مختلف علاقوں میں غیر قانونی تیل ایجنسیاں‘ بڑے حادثے کا خدشہ

  

وہاڑی (بیورو رپورٹ، نامہ نگار) چیف آفیسر سول ڈیفنس کی مبینہ ملی بھگت سے غیر قانونی تیل ایجنسیوں کی بھرمار ہو گئی تفصیل کے مطابق دیہی علاقوں چکنمبر 561ای بی،ماچھیوال، پکھی موڑ، میاں پکھی ودیگر علاقوں میں غیر قانونی ایجنسیوں کی بھرمار ہے۔شہریوں شکیل، شکور، مقبول، ہارون، عمر، احمد رضوان ویگر نے شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ سول ڈیفنس آفیسر وعملہ کی مبینہ ملی بھگت اور منتھلیوں کی چمک کی وجہ سے ہر ماہ نئی غیر قانونی تیل ایجنسی کا اضافہ ہو جاتا ہے۔ابھی حال ہی میں نواحی گاؤں 561 ای بی میں دو بھٹہ خشت کے ساتھ ہی غیر قانونی ایجنسی نما پمپ کا آغاز ہوا تو اسکے آغاز سے قبل ہی میدیا میں خبریں شائع ہوئیں لیکن ذمہ داران نے پہلے تو افسران کے ڈر سے اسے سیل کیا لیکن چند دنوں بعد مبینہ طور پر بھاری رقم لے کر اسے ڈی سیل کر دیا 561ای بی غیر قانونی طور پر بننے والی ایجنسی پٹرول شارٹیج کا فائدہ اٹھاتے ہوئے نہ صرف پٹرول وڈیزل مبینہ طور پر بلیک میں فروخت کر رہی ہے بلکہ اہل علاقہ کے لئے سیکورٹی رسک بھی بنی ہوئی ہے شہریوں نے کمشنر اورڈپٹی کمشنر سے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ اگر تھوڑی سی بھی غفلت برتی گئی تو یہ کسی بڑے نقصان کا بیش خیمہ بن سکتی ہے۔

خدشہ 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -