پاکستان کا طورخم،غلام خان اور چمن بارڈر کو ہفتہ میں 6دکھولنے کا فیصلہ

پاکستان کا طورخم،غلام خان اور چمن بارڈر کو ہفتہ میں 6دکھولنے کا فیصلہ

  

اسلام آباد (آئی این پی)مشیر تجارت عبدالرازق داؤد نے کہا ہے کہ افغان سفیر کو آگاہ کیا ہے کہ پاکستان نے طورخم اور چمن کو ٹرانزٹ تجارت کیلئے ہفتہ میں چھ دن کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔اس کے ساتھ ساتھ ایک تیسرا تجارتی راستہ غلام خان بھی کھولا جا رہا ہے، تا کہ بیک لاگ ختم کیا جا سکے۔ 22 جون سے کووڈ-19کو مد نظر رکھتے ہوئے افغانی درآمدات کو تینوں کراسنگ پوائنٹ سے اجازت ہو گی۔افغان پاکستان افغانستان ٹرانزٹ تجارت معاہدے کے حوالے سے مذاکرات دوبارہ شروع کرنے پر بات چیت ہوئی ہے۔افغانستان کے راستے غیر قانونی درآمدات روکنے کیلئے مزید حفاظتی اقدامات پر بھی زور دیا ہے۔ ہفتہ کو مشیر تجارت عبدالرازق داؤد نے سوشل میڈیا پر اپنے بیان میں کہا کہ افغانستان کے سفیر عزت معاب عاطف مشعل سے ملاقات ہوئی۔افغان سفیر کو آگاہ کیا کہ پاکستان نے طورخم اور چمن کو ٹرانزٹ تجارت کیلئے ہفتہ میں چھ دن کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔ افغان سفیر نے رواں سال جولائی اگست میں تجارتی وفد کے ساتھ افغانستان مدعو کیا ہے۔پاکستان افغانستان ٹرانزٹ تجارت معاہدے کے حوالے سے مذاکرات دوبارہ شروع کرنے پر بات چیت ہوئی۔افغانستان کے راستے غیر قانونی درآمدات روکنے کیلئے مزید حفاظتی اقدامات پر بھی زور دیا ہے۔ افغان سفیر کو دو طرفہ تجارت سے متعلق تمام مسائل کو جلد حل کرنے کی پاکستان کی خواہش کی یقین دہانی کرائی۔

بارڈرکھولنے کا فیصلہ

مزید :

صفحہ اول -