اشیائے خوردنوش کی قیمتیں تھم نہ سکیں، ادرک 425روپے تک پہنچ گئی

اشیائے خوردنوش کی قیمتیں تھم نہ سکیں، ادرک 425روپے تک پہنچ گئی

  

 لاہور(خبر نگار)صوبائی دارالحکومت میں اشیائے خورو نوش سمیت سبزیوں،پھلوں کے نرخوں میں ہوشربا اضاضے کا سلسلہ تھم نہیں سکا، سرکاری نرخوں میں اضافے کے سبب سہولت بازار بھی غریب عوام کی پہنچ سے دور ہو گئے ہیں،ادرک،لہسن،میتھی،شملہ مرچ،لیمو سمیت متعدد اشیاء کی قیمتیں ڈبل سنچری تک پہنچ گئی ہیں۔جن میں ادرک سب سے سرفہرست ہے جس کی قیمت چار سوسے تجاوز کر گئی ہے، چینی سہولت بازاروں کے بعد عام مارکیٹ میں بھی نایاب ہونے لگی جبکہ آٹے کا بحران بھی سر اٹھانے لگا ہے۔ سبزیوں میں مٹر 124 روپے فی کلو،شملہ مرچ100، لہسن120، آلو55، ٹینڈے145، لیمو155، میتھی165، ادرک 425، پھلیاں 135روپے کلو میں فروخت ہوتی نظر آئیں جبکہ پھلوں میں سیب 160 روپے کلو، آلو بخارا260، آڑو165، آم120تا150 جبکہ خربوزہ 60روپے کلو میں فروخت ہو تا رہا ہے۔ عام مارکیٹ میں گھی 270روپے سے لے کر 310 روپے جبکہ سہولت بازاروں میں قیمت 240 سے 280 روپے تک ہے۔ جبکہ چینی عام مارکیٹ میں 100 روپے 120 روپے فی کلو جو کہ سہولت بازاروں کے بعد عام مارکیٹ میں بھی نایاب ہوتی جا رہی ہے۔ آٹے کی قیمت عام مارکیٹ میں فی کلو 60 سے 80روپے ہے جو کہ فلور ملز کی جانب سے آٹے کی سپلائی بند کرنے کے اعلان کے بعد  آٹے کی قلت پیدا اور قیمت مزید بڑھنے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔اس کے علاوہ دالوں،مصالحہ جات کی قیمتوں میں بھی غیر ضروری طور پر اضافہ کر دیا گیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -