خطرناک راہزن اور سنیچرز گروہ گرفتار، 11 عدد موٹر سائیکل برآمد

  خطرناک راہزن اور سنیچرز گروہ گرفتار، 11 عدد موٹر سائیکل برآمد

  

پشاور(کرائم رپورٹر)کیپٹل سٹی پولیس پشاور نے شاہ قبول، بھانہ ماڑی، تاریخی بازار قصہ خوانی، کوتوالی اور گلبہار سمیت اندرون شہر کے مختلف علاقوں میں شہریوں سے گن پوائنٹ پر موٹر سائیکل چھیننے والے تین خطرناک ملزمان کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزمان کا تعلق پشاور کے نواحی علاقوں سے ہے جو انجن اور چیسز نمبرات تبدیل کرنے کے بھی ماہر ہیں، ملزمان نے انجن اور چیسز نمبرات تبدیل کرنے کی خاطر اپنے رہائشی گھر میں علیحدہ ورکشاپ قائم کیا تھا جہاں پر چھینے گئے موٹر سائیکل کے انجن اور چیسز نمبرات تبدیل کرنے کے بعد فروخت کئے جاتے تھے، ملزمان نے ابتدائی تفتیش کے دوران راہزنی اور موٹر سائیکل سنیچنگ کے متعدد وارداتوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے اندرون شہر سرگرم راہزن گروہ کی نشاندھی کی ہے جن کے قبضے سے سالم اور سپئر پارٹس کی شکل میں مجموعی طور پر 11 عدد موٹر سائیکل برآمد کرنے کیساتھ ساتھ انجن اور چیسز نمبرات تبدیل کرنے والے اوزار بھی برآمد کر لئے گئے ہیں جن سے دوران تفتیش مزید اہم انکشافات کی جا رہی ہے تفصیلات کے مطابق مدعی عبدالخالق ولد اکرم خان سکنہ شاد خان قلعہ نے تھانہ مچنی گیٹ پولیس کو موٹر سائیکل چوری ہونے کی رپورٹ کی تھی جس پر مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی ایس ایچ او تھانہ مچنی گیٹ لعل زادہ خان نے دوران تفتیش ملزمان کا سراغ لگانے کیلئے متعدد جرائم پیشہ اور مشتبہ افراد کو شامل تفتیش کیا جس کے دوران راہزنی اور موٹر سائیکل سنیچنگ میں ملوث خطرناک گینگ کا سراغ لگا کر گزشتہ روز کامیاب کاروائی کے دوران تین ملزمان ارشد ولد شمس القمر، محمد منظر ولد خلیل الرحمٰن اور گل نواز ولد رحمان الدین کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزمان نے ابتدائی تفتیش کے دوران شاہ قبول، بھانہ ماڑی، تاریخی بازار قصہ خوانی، کوتوالی، گلبہار اور مچنی گیٹ سمیت اندرون شہر کے مختلف علاقوں میں شہریوں سے گن پوائنٹ پر موٹر سائیکل چھیننے کا اعتراف کرتے ہوئے مختلف تجارتی مراکز اور گھروں کے سامنے سے متعدد موٹر سائیکل چوری کرنے کے وارداتوں کا بھی انکشاف کیا ہے جن کے قبضے سے سالم اور سپئر پارٹس کی شکل میں مجموعی طور پر 11 عدد موٹر سائیکل برآمد کرنے کیساتھ ساتھ انجن اور چیسز نمبرات تبدیل کرنے والے اوزار بھی برآمد کر لئے گئے ہیں، ملزمان نے اپنے رہائشی گھر میں باقاعدہ ورکشاپ قائم کی تھی جہاں مسروقہ اور چھینے گئے موٹر سائیکل کے نمبرات تبدیل کرنے کے بعد فروخت کئے جاتے تھے، ملزمان کی نشاندھی پر اندرون شہر میں سرگرم ایک اور گروہ کو بھی شامل تفتیش کر لیا گیا ہے جن کی گرفتاری جلد متوقع ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -