حکومت کا نشے کے عادی افراد کے لیے بڑا قدم

حکومت کا نشے کے عادی افراد کے لیے بڑا قدم
حکومت کا نشے کے عادی افراد کے لیے بڑا قدم

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )حکومت نے سڑکوں اور فٹ پاتھوں پر موجود نشئی افراد کی بحالی کے لیے پولیس اور ضلعی انتظامیہ کو ٹاسک سونپ دیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان  کی ہدایت پرمنشیات کے خاتمے کے لیے آئی جی پنجاب  انعام غنی کی  سربراہی میں لاہورپولیس اور انتظامیہ کا مشترکہ اجلاس ہوا۔اجلاس میں سی سی پی او لاہور غلام محمود ڈوگر، کمشنر لاہور،کیپٹن (ر)عثمان اورڈی آئی جی آئی ٹی، وقاص نذیر موجود تھے۔اجلا س میں فیصلہ کیا گیا کہ لاہور کی سڑکوں اورفٹ پاتھوں کو نشے کے عادی افراد سے نہ صرف پاک کیا جائے گا بلکہ ان افراد کو بحالی سنٹرز میں منتقل کیا جائے گا۔  کمشنر لاہور ان افراد کے علاج اور بحالی کے لیے بحالی مرکز کے قیام کے لیے فوری طور پر جگہ کا انتظام کریں گے۔لاہور پولیس روزانہ کم از کم دو مرتبہ منشیات کے عادی افراد کوفٹ پاتھوں اور سڑکوں سے بحالی مراکز کی انتظامیہ کے سپرد کریں گے۔ 

آئی جی پنجاب کا کہنا تھا کہ  کسی ڈیرے، کیفے، تعلیمی ادارے یا جہاں کہیں منشیات کی فروخت یا استعمال کی اطلاع ملی وہاں بلا امتیاز کارروائی ہو گی۔ آپریشنز کے حوالے سے سوشل ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ اور محکمہ صحت سے بھی مدد و معاونت لی جائے گی۔اس مقصد کے لیے کمشنر لاہور مستند این جی اوز سے معاونت کے لیے ان سے قریبی رابطہ رکھیں گے۔ پنجاب بالخصوص لاہور میں منشیات فروشوں کے خلاف پولیس، اے این ایف اور ضلعی انتظامیہ مل کر کارروائی کریں گے۔ شہری پولیس کی  ”زندگی ایپ“ کے ذریعے منشیات فروشی یا نشے کے عادی افراد کے بارے اطلاع دے سکتے ہیں۔ 

مزید :

قومی -