12سالہ لڑکی کو پیٹ میں درد، چیک اپ کرانے پر ایسا انکشاف کہ باپ نے ہی موت کے گھاٹ اتاردی

12سالہ لڑکی کو پیٹ میں درد، چیک اپ کرانے پر ایسا انکشاف کہ باپ نے ہی موت کے ...
12سالہ لڑکی کو پیٹ میں درد، چیک اپ کرانے پر ایسا انکشاف کہ باپ نے ہی موت کے گھاٹ اتاردی

  

کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلوی ریاست کوئنز لینڈ میں رضاعی باپ نے اپنے سگے بیٹے کے ساتھ جنسی تعلق قائم کرنے پر اپنی 12سالہ سوتیلی بیٹی کو موت کے گھاٹ اتار ڈالا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق ملزم کا نام رچرڈ تھوربرن ہے جس کے بیٹے ٹرینٹ تھوربرن نے فیملی کے سامنے اعتراف کیا تھا کہ وہ اپنی رضاعی بہن تیالی پالمر کے ساتھ جنسی تعلق قائم کر چکا ہے۔بیٹے کے اس انکشاف پر ملزم نے 12سالہ لڑکی کو تشدد کا نشانہ بنایا اور اس کے منہ پر تکیہ رکھ کر اس کا دم گھونٹ دیا جس سے وہ موت کے منہ میں چلی گئی۔ رپورٹ کے مطابق ملزم خود بھی جنسی جرائم میں ملوث رہ چکا ہے اور عدالت سے سزا بھی پا چکا ہے۔ 

پراسیکیوٹرز کے مطابق ملزم کا بیٹا لڑکی کے ساتھ کافی عرصے سے جنسی تعلق قائم کرتا آ رہا تھا جس کے نتیجے میں وہ حاملہ ہو چکی تھی۔ اس نے گزشتہ دنوں پیٹ میں درد کی شکایت کی اور چیک اپ کرانے پر اس کے حاملہ ہونے کا انکشاف سامنے آگیا۔ جب لڑکی سے پوچھ گچھ کی گئی تو اس نے برینٹ کا نام لیا اور برینٹ نے بھی اس کا اعتراف کر لیا جس پر برینٹ کو پولیس کے حوالے کرنے کی بجائے ملزم نے لڑکی ہی کو موت کے گھاٹ اتار ڈالا۔

مزید :

بین الاقوامی -