والدین روتے رہ گئے، پسند کی شادی کرنے والی لڑکی شوہر کے ساتھ چلی گئی

والدین روتے رہ گئے، پسند کی شادی کرنے والی لڑکی شوہر کے ساتھ چلی گئی
والدین روتے رہ گئے، پسند کی شادی کرنے والی لڑکی شوہر کے ساتھ چلی گئی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) لاہور ہائیکورٹ نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو شوہر کے ساتھ جانے کی اجازت دے دی۔

پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کے والد طاہر محمود نے لاہور ہائیکورٹ میں اپنی درخواست میں کہا تھا کہ اس کی بیٹی کو حبس بے جا میں رکھا گیا ہے۔ لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عالیہ نیلم نے درخواست پر سماعت کی۔ پولیس کی جانب سے لڑکی سعدیہ بی بی کو عدالت میں پیش کیا گیا۔ لڑکی نے عدالت کے روبرو کہا کہ اس نے پسند کی شادی کی ہے اور وہ اپنے شوہر کے ساتھ رہنا چاہتی ہے۔ بیٹی کا یہ بیان سن کر والدین آبدیدہ ہوگئے اور روتے رہے۔ عدالت نے لڑکی کو اپنے شوہر کے ساتھ جانے کی اجازت دے دی۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -