سعودی عرب میں تیز دھوپ میں مزدوری کروانے والوں کے گرد گھیرا تنگ کر دیا گیا

سعودی عرب میں تیز دھوپ میں مزدوری کروانے والوں کے گرد گھیرا تنگ کر دیا گیا
سعودی عرب میں تیز دھوپ میں مزدوری کروانے والوں کے گرد گھیرا تنگ کر دیا گیا
سورس: Wikimedia Commons

  

ریاض  (ویب ڈیسک) سعودی وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود نے گزشتہ پانچ روز کے دوران دوپہر12 سے سہ پہر تین بجے تک دھوپ میں کھلے مقامات پر ڈیوٹی لینے والوں کے خلاف کارروائی کی ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق اس حوالے سے وزارت کے ترجمان کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں مختلف علاقوں سے 45 خلاف ورزیاں ریکارڈ پر آئی تھیں جن کیخلاف فوری کارروائی کی گئی۔سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود کے ترجمان سعد آل حماد نے کہا کہ جو آجر دھوپ میں کھلے مقامات پر اپنے کارکنان سے ڈیوٹی لے گا یا خراب موسمی حالات میں ضروری احتیاطی تدابیر کے بغیر کارکنان سے کام لے گا اس پر فی کارکن 3 ہزار ریال جرمانہ ہوگا۔

ترجمان نے کہا کہ آجروں کے لیے ضروری ہے کہ وہ دھوپ میں کھلے مقامات پر ڈیوٹی پر پابندی کا احترام اور اوقات کار کو منظم کریں۔انہوں نے کہا کہ جو سعودی شہری یا مقیم غیرملکی دوپہر کے وقت کھلے مقامات پر ڈیوٹی کی پابندی کی خلاف ورزی دیکھے تو اس کی اطلاع کریں۔

یاد رہے کہ سعودی قانون محنت کے بموجب دوپہر 12 سے سہ پہر تین بجے تک دھوپ میں کھلے مقامات پر ڈیوٹی لینا منع ہے، اس پر عمل درآمد 15 جون سے شروع ہوا تھا اور جمعرات15 ستمبر 2022 تک جاری رہے گا۔

مزید :

عرب دنیا -