معیشت کوسنبھالا دینے کےبجائے انتخابات کو پیش نظر رکھتے ہوئے بجٹ بنایا گیا،پاکستان ٹیکس بار 

معیشت کوسنبھالا دینے کےبجائے انتخابات کو پیش نظر رکھتے ہوئے بجٹ بنایا ...
معیشت کوسنبھالا دینے کےبجائے انتخابات کو پیش نظر رکھتے ہوئے بجٹ بنایا گیا،پاکستان ٹیکس بار 

  

لاہور(آئی پی ایس)حکومت نے بجٹ میں معیشت کوسنبھالا دینے کیلئے کسی طرح کے غیر معمولی فیصلے کرنے کی بجائے آئندہ عام انتخابات کو پیش نظر رکھتے ہوئے بجٹ بنایا ہے ،ایف بی آر کادعوی ہے کہ اس کے پاس دو کروڑ ایسے افراد کا ڈیٹا موجود ہے جو قابل ٹیکس آمدن رکھتے ہیں پھر انہیں ٹیکس نیٹ میں لانے کیلئے پیشرفت کیوں نہیں کی جارہی، اصلاحات کیلئے عملی طور پر کوئی اقدامات نہیں اٹھائے جارہے جس کے منفی نتائج برآمدہو رہے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار پاکستان ٹیکس بار ایسوسی ایشن کے صدر رانا منیر حسین، جنرل سیکرٹری قمر الزمان چودھری، نائب صدر عامر شہزاد، طاہر محمود بٹ، شہباز قادر، سیکرٹری اطلاعات رانا کاشف ولایت، لاہور ٹیکس بار کے صدر نعمان یحیی ، نائب صدر شکیل احمدبسرا ، جنرل سیکرٹری مرزا مبشر بیگ اور دیگر نے پوسٹ بجٹ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

مقررین نے کہا کہ 4589 ارب کا بجٹ خسارہ اور پہاڑ جیسے گردشی قرضے موجود ہیں لیکن ان سے نمٹنے کے لئے کوئی اقدامات تجویز نہیں کئے گئے ۔جس طرح کے معاشی حالات ہیں حکومت کو مجموعی ٹیکس آمدن کے ہدف پر نظر ثانی کرنا پڑے گی ۔انہوں نے کہا کہ حکومت فنانس بل کی منظوری سے قبل معیشت کے ماہرین سے مشاورت کرے اور خاص طو رپر ٹیکسیشن کے نظام میں اصلاحات تجویز کی جائیں ۔

انہوں نے کہا کہ جس طرح کے حالات بن گئے ہیں ایسے میں یقینی طو رپر منی بجٹ آئیں گے جس سے خوف و ہراس کی فضا پھیلے گی اور اس سے مقامی معیشت پر بھی منفی اثرات مرتب ہوں گے ۔پوسٹ بجٹ سیمینا رمیں ایف بی آر کے افسران نے شرکت کر کے بجٹ کے خدو خال پر روشنی ڈالی۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -بجٹ -